عالمی ادارے نے پاکستانی معیشت کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی

عالمی ادارے نے پاکستانی معیشت کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی


(24 نیوز) پاکستان کوعالمی مارکیٹ سے قرض ملنا مزید مشکل اور مہنگا ہوگیا، عالمی ریٹنگ کے ادارے ایس اینڈ پی نے پاکستان کی کریڈٹ ریٹنگ بی سے کم کر کے منفی بی کر دی۔

اسٹینڈرڈ اینڈ پوورز گلوبل ریٹنگز کے مطابق ترقی کی شرح میں کمی،مالیاتی اور بیرونی سیکٹر پر بہت زیادہ دباؤ کے باعث پاکستان کی کریڈٹ ریٹنگ ایک درجے تنزلی کے بعد منفی بی کی گئی ہے، تاہم بیرونی ادائیگیوں کے سلسلے میں 12 ماہ تک مناسب وسائل دستیاب ہونے کے امکانات کی وجہ سے پاکستان کی ریٹنگ آوٹ لک کومستحکم برقرار رکھا گیاہے۔

ایس اینڈ پی کے مطابق پاکستان نے فوری بیرونی ضروریات کیلئے دوسرے ممالک سے مالی امداد حاصل تو کر لی لیکن اس کے باوجود مالیاتی اور بیرونی سیکٹر میں زیادہ عدم توازن برقرار رہے گا، پاکستان کے آئی ایم ایف سے مذاکرات معمول سے زیادہ طویل ہوچکے ہیں جس کے باعث اقتصادی صورتحال میں بہتری کے سلسلے میں کی جانے والی معاشی اصلاحات اتنی زیادہ موثر ہونے کا امکان نہیں جتنی توقع کی جارہی تھی۔

یاد رہے اس سے قبل دسمبر میں دوسری عالمی ریٹنگ ایجنسی فچ نے بھی پاکستان کی لانگ ٹرم کریڈٹ ریٹنگ میں تنزلی کر کے منفی بی کر دی تھی۔

Malik Sultan Awan

Content Writer