ن لیگ نے اہم معاملے پر بڑا یوٹرن لے لیا

ن لیگ نے اہم معاملے پر بڑا یوٹرن لے لیا


اسلام آباد(24نیوز) ن لیگ نے آرمی ایکٹ ترمیم کا حصہ نہ بننے کا فیصلہ کرلیا۔ مریم نوازنے قانون سازی کی حمایت کرنےکے فیصلے کی مخالفت کردی۔

قومی اسمبلی کاآج ہونےوالااجلاس ملتوی کیوں ہوا۔ ٹوئنٹی فورنیوزنےاندرونی کہانی کا پتہ چلالیا۔ آرمی ایکٹ میں ترمیم اور قانون سازی پر ن لیگ نے پہلےہاں کی۔ اب اگرمگرکی صورتحال ہے۔ لیگی ذرائع کےمطابق پارٹی نے آرمی ایکٹ ترمیم کا حصہ نہ بننے کا فیصلہ کیا۔ پارٹی کی نائب صدرمریم نواز نے قانون سازی کےلیے ن لیگ کے فیصلے کی مخالفت کی ہے۔ میاں نوازشریف کوبھی اس بارے آگاہ کردیاگیا ہے۔

مریم نواز کا کہنا ہےکہ پارٹی کے فیصلے اور بیانیہ پر لیگی اسپورٹرز کی طرف سے شدید تنقید کا سامنا ہے۔ مریم نواز نے اس معاملے پر پارٹی عہدے سے مستعفی ہونے کا بھی اشارہ دیا ہے۔ذرائع کے مطابق میاں نوازشریف نے پارٹی رہنماؤں کوایوان میں بل کی منظوری کے وقت کارروائی کا حصہ نہ بننے کی ہدایت کی ہے.

مریم نواز نے ایک ٹویٹر صارف کے ٹویٹ کو بھی لائیک کیا جس میں مریم نواز سے آرمی ایکٹ پر مشاورت نہ کرنے کا ذکرہے، دوسری جانب ن لیگ کے سینئر رہنما خواجہ آصف کا کہنا ہےکہ معاملے پرنہ تو مریم نواز ناراض ہیں اور نہ ہی پارٹی بل کی مخالفت کرنے کی کوئی ہدایات موصول ہوئیں ہیں۔

ذرائع کےمطابق آرمی ایکٹ سے متعلق قانون سازی کےوقت ن لیگی ارکان خاموش رہیں گے یا قانون سازی کا حصہ ہی نہیں بنیں گے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔