نگران بھی منتخب حکمرانوں جیسے نکلے،عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈال دیا

نگران بھی منتخب حکمرانوں جیسے نکلے،عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈال دیا


اسلام آباد(24نیوز)  نگران حکومت نے ایک ماہ میں عوام کی جیبوں پر 31 ارب روپے کا ڈاکا ڈال دیا، عالمی مارکیٹ میں خام تیل جتنا مہنگا ہوا پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات اس سے 12 گنا تک زیادہ مہنگی کر دی گئیں۔

عالمی مارکیٹ میں گزشتہ ماہ کے دوران اسٹیٹ بینک کی ایک رپورٹ کے مطابق عرب ممالک کے خام تیل کی قیمت میں صفر اعشاریہ چھ سے ایک فیصد تک اضافہ رکارڈ کیا گیا لیکن نگران حکومت نے اپنے اخراجات کے لیے رقم کی وصولی کے لیے پیٹرول کی قیمت 8.2 فیصد ، ڈیزل کی 13.3 فیصد اور مٹی کے تیل کی 4 فیصد بڑھا دی۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:حکومت بنانے کیلئے پنجاب اور خیبرپختونخوا ہی کافی ہے: عمران خان 

  پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی اوسط ماہانہ کھپت 22 سے 23 لاکھ ٹن ہے۔ اس کے مطابق جولائی کے مہینہ میں عوام کو پٹرول کی مد میں 7 ارب 16 کروڑ روپے، ڈیزل کی خریداری پر تقریبا 23 ارب روپے اور مٹی کے تیل کی خریداری پر ساڑھے 5 کروڑ روپے اضافی ادا کرنے پڑیں گے جبکہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت بڑھنے سے ہونے والی مہنگائی کے باعث بھی عوام کے کتنے ارب روپے اضافی طور پر خرچ ہوں گے اس کا ابھی اندازہ لگانا مشکل ہے۔