”وقت سے پہلے طفل سیانے ہو جاتے ہیں“معصوم بچوں کا عالمی دن

”وقت سے پہلے طفل سیانے ہو جاتے ہیں“معصوم بچوں کا عالمی دن


کراچی ( 24نیوز )آج دنیا بھر میں معصوم بچوں کے خلاف جارحیت کا عالمی دن منایا جا رہا ہے،ننھے پھول معاشرے کے رویوں کو کیسے برداشت کرتے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق بچے کسی بھی ملک کا مستقبل ،سرمایہ اور اثاثہ ہوتے ہیں ،لیکن حالات سے مجبور،بچپن سے دور یہ بچے جب معاشرے کے تلخ رویوں کا شکار ہوتے ہیں تو اپنی معصومیت بھی کہیں کھو بیٹھتے ہیں۔

کراچی شہر کے ایک طرف بنی جھونپڑیوں میں ننھے ہاتھوں سے چولہا بناتی معصوم عا ئشہ اپنی حسرتیں بھی جیسے اس میں جھونک رہی ہو،غربت کی کوکھ میں پلتی ،کھلونوں سے محروم،نہر کنارے ”پینگھ “پہ جھولے لیتی،معاشرے کے تلخ رویوں کا شکار ہے،سکول جانے کی خواہش تو ہے۔لیکن جھوٹے اسٹیٹیس کا سہارا لے کر انسانی حقوق کا دعوی کرنے والون کی نظر ان پر نہیں پڑتی ۔

یہ بھی پڑھیں:  ریحام خان کی کتاب پر اتنا خوف کیوں؟

صرف عائشہ ہی نہیں بلکہ اس جیسے اور کتنے بچے دم توڑتی حسرتوں تلے اپنی زندگی گذار رہے ہیں جو نہ صرف احساس کمتری کو اپنے اندر سموئے ہوئے ہین بلکہ عام بچوں جیسی توجہ نہ ملنے پر ہمیشہ نفسیاتی دباو کا شکار رہتے ہین،حالات جہاں انھیں وقت سے پہلے بڑا کر دیتے ہیں،وہیں اپنی خواہشوں کو نہیں بھول پاتے ۔

انسانی حقوق کا دعوی کرنے والی تنظمیں اگر ایک نظر انکی جانب ڈال لیں تو شاید انکی زندگی سنور جائے اور یہ ایک نارمل زندگی گزار سکیں ۔

ہر ایک تلخی پیدا ہوتے مل جاتی ہے

وقت سے پہلے طفل سیانے ہو جاتے ہیں