بے نامی اکاؤنٹس کاسلسلہ تھم نہ سکا، ایک بار پھر اربوں کی ٹرانزیکشن

بے نامی اکاؤنٹس کاسلسلہ تھم نہ سکا، ایک بار پھر اربوں کی ٹرانزیکشن


پشاور(24نیوز) بےنامی بینک اکاؤنٹس سامنے آنے کا سلسلہ جاری، ایف آئی اے پشاور نے مزید 30 بے نامی اکاؤنٹس کا سراغ لگالیا۔

تفصیلات کے مطابق بے نامی اکاؤنٹس، منی لانڈرنگ کیس میں اہم  پیش رفت ہوئی، بے نامی اکاؤنٹس  سامنے آنے کا سلسلہ تھم نہ سکا، ایف آئی اے نے پشاور میں مزید 30 بے نامی اکاؤئٹس کا سراغ لگا لیا، ان اکاؤنٹس میں 10 ارب روپے کی ٹرانزیکشنز کی گئیں، 8اکاؤنٹس  گھریلو ملازمین کے نام پر کھلوائے گئے تھے،  ایف آئی کے حکام کا کہنا تھا کہ ملازمین کی اپنی کمائی 12 سے 15 ہزار روپےتک ہے،بے نامی اکاؤنٹس سے 10 ارب روپے کےقریب ٹرانزیکشن ہوئی ہیں۔

حکام کا مزید کہنا تھا کہ ثبوت ملے ہیں کہ اکاؤنٹس منی لانڈرنگ میں استعمال ہورہے تھے اور ٹرانزایکشن بیشتر اضلاع میں کی گئی ہے اس کے علاوہ بونیر، سوات ، کالام اور بشام کے بنکوں میں بھی بے نامی اکاؤنٹس سامنےآئےہیں۔

ملوث افراد کے شناختی کارڈ مزید معلومات حاصل کرنے کے لئےاسٹیٹ بنک ارسال کئے گئے ہیں۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER