"تحریک انصاف وعدہ وفا نہ کرسکی"


پشاور(24نیوز) تحریک انصاف کا گھر گھرمفت بجلی پہنچانے کا وعدہ چارسال بعدبھی پورا نہ ہوسکا۔ ایک طرف حکومت 356 منی ہائیڈرو پراجیکٹ میں 256 کی تکمیل کا دعویٰ کررہی ہے تو دوسری جانب ان کے قدرتی آفات سے نمٹنے پر سوالات اُٹھ رہے ہیں۔

پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے 12 اضلاع میں تاریکی مٹانے کے لئے 18 مہینوں میں 356 ڈیمز بنانے کا وعدہ کیا تھا۔  چار سال میں 256 منی ہائیڈرو پراجیکٹ پر کام تو مکمل کرلیا مگر یہ منصوبہ صرف شمالی اضلاع تک ہی محدودہے۔
ایشین ڈویلپمنٹ بینک اور خیبر پختونخوا حکومت کے تعاون سے صوبے کے شمالی اضلاع میں 5 ارب 30 کروڑ روپے کی لاگت سے چھوٹے پن بجلی گھروں پر کام کا آغاز ہوا جسے اب تک عملی جامہ نہیں پہنایا جاسکا۔ دوسری جانب منصوبے کے حوالے سے یہ بھی سوالات اٹھائے جا رہے ہیں کہ یہ قدرتی آفات سے کتنے محفوظ ہیں۔
صوبائی حکومت مزید 650 چھوٹے پن بجلی گھروں کا منصوبہ رکھتی ہے جو جنوبی اضلاع میں نہروں پر قائم کئے جائیں گے جس سے 12 لاکھ سے زائد لوگ مستفید ہونگے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔