ڈاکٹر طاہر القادری نے کل سے ایک اور دھرنے کا اعلان کردیا

ڈاکٹر طاہر القادری نے کل سے ایک اور دھرنے کا اعلان کردیا


لاہور (24 نیوز): پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کل سے ایک اور دھرنے کا اعلان کردیا، انہوں نے کہا کہ رپورٹ کے حصول تک بیٹھے رہیں گے۔

 

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ نے کہا کہ سول سیکرٹریٹ کے سامنے کل سے دھرنا دیں گے، ن لیگ اور اتحادیوں کو چھوڑ کر تمام جماعتوں کو شرکت کی دعوت ہے، ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ قوم مظلوموں سے اظہار یکجہتی کیلئے کھڑی ہو۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ ہمارا دھرنا 75 روز جاری رہا، دھرنے کے دوران شریف برادران کا استعفیٰ مانگا تھا کیونکہ ہم نہیں چاہتے تھے کہ ان کے اقتدار میں فیصلہ ہو، بربریت کرنے والے انصاف کے قاتل ہیں۔ ہم نے دھرنا ختم کرکے قانونی جنگ کا آغاز کیا، حکومت کو رپورٹ بلڈوز نہیں کرنے دیں گے۔

 

طاہرالقادری نے کہا کہ ہماری ایف آئی آر بھی آرمی چیف کی مداخلت پر ہوئی، 3 سال سے دہری جنگ لڑ رہے ہیں، ہم اپنے اصولی موقف پر قائم تھے کہ شہبازشریف استعفیٰ دیں کیونکہ سانحے میں 14 کارکن شہید، 90 کو گولیاں ماری گئیں۔

 

انہوں نے کہا کہ شہبازشریف نے سانحہ ماڈل ٹاؤن پر کمیشن قائم کیا تھا، جبکہ ہم نے سپریم کورٹ کے 3 ججز پر کمیشن بنانے کا مطالبہ کیا تھا، وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا تھا کہ ذمہ داری آئی تو استعفیٰ دیں گے، لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا۔