فراڈ اور جلعسازی سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان

فراڈ اور جلعسازی سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان


اسلام آباد(24نیوز) بیرون ملک تعینات کمیونٹی ویلفیئر اتاشی کروڑ روپے کی مالی بدعنوانی ملوث نکلے، تحقیقات کے دوران 12 اور اتاشیوں کے نام سامنے آگئے، لیکن حکومتی ادارے ابھی تک اس معاملے پر خاموشی اختیارکئے ہوئے ہیں، 24نیوز کو اسکینڈل سے متعلق دستاویز موصول ہوگئیں۔

دستاویزات کے مطابق  ابوظہبی،بحرین، اسپین، کویت، لندن، مانچسٹر، اٹلی، لاس اینجلنس، مسقط اور کویت میں تعینات کمیونٹی ویلفئیر اتاشیوں لمبی موجیں، اتاشیوں اور ان کے عملے کی پاکستان میں بھی سرکاری رہائش، بیرون ملک بھی رہائش کی مد میں لاکھوں ڈالر وصول کرنے لگے۔ فراڈ اور جعل سازی سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے نقصان پہنچانے والے عناصر کیخلاف کارروائی تو درکنار انہیں بچانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ کیس کی انکوائری میں ڈائریکٹر سائبر کرائم کیپٹن شعیب پیش پیش ہیں۔ متعلقہ وزارت اور ادارے اس اسکینڈل میں ملوث لوگوں کی مبینہ پشت پناہی کرتے دکھائی دیتے ہیں۔ اسکینڈل بے نقاب کرنے والا سابق ڈائریکٹر ایف آئی اے انعام غنی عتاب کا شکار ہے۔

ذرائع کے مطابق اس بہتی گنگا میں کئی افسروں نے ہاتھ دھوئے اور قومی خزانے کو اربوں روپے نقصان پہنچایا۔ جن میں مرید رحمان بھی شامل ہے۔ جس کے خلاف مقدمہ تو درج ہوا لیکن بیورو کریسی تحقیقات میں رکاوٹ بن گئی۔