اسلام آباد : پولیس کے ہاتھوں نوجوانوں کی ہلاکت

اسلام آباد : پولیس کے ہاتھوں نوجوانوں کی ہلاکت


اسلام آباد(24نیوز) راولپنڈی اور اسلام آباد میں پولیس کے ہاتھوں ہلاک ہونے والے2 نوجوانوں لواحقین سراپا احتجاج ، گنج منڈی اور کوہسار تھانے کے باہر احتجاج کے دوران پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی، ماورائے عدالت قتل میں ملوث 3 پولیس اہلکاروں کو معطل کرکے انکوائری شروع کر دی گئی، راولپنڈی کا زخمی نوجوان 1 ماہ تک موت و حیات کی کشمکش میں رہنے کے بعد دم توڑ گیا۔

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی اسلام آباد میں مبینہ طور پر پولیس کے ہاتھوں 2 نوجوان ہلاک ہوئے۔ جاں بحق نوجوانوں کےلواحقین تھانا گنج منڈی اور کوہسار کےباہر احتجاج کیا۔ مظاہرین نے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کر دیا۔ تھانہ گنج منڈی کا گھیراو کرلیا۔پولیس کے خلاف نعرے بازی کی۔ ماورائے عدالت قتل میں ملوث 3 اہلکاروں کو معطل کرکے انکوائری شروع کر دی گئی۔ تھانہ بنی کی حدود میں 1 ماہ قبل پولیس کی فائرنگ سے زخمی نوجوان عثمان اسپتال میں دم توڑ گیا۔ ورثا نے لاش بنی چوک رکھ کر احتجاج کیا۔مظاہرین نے ملزم گرفتار نہ کیے جانے پر پولیس مخالف نعرے بازی کی۔

واضح رہے کہ اسلام آباد میں گزشتہ روز مبینہ طور پر پولیس کے ہاتھوں ہلاک نوجوان لواحقین بھی تھانا کوہسار کے باہر جمع ہوگئے اور پولیس کے خلاف شدید احتجاج کیا۔مظاہرین نے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کیا۔تھانہ کوہسار پولیس نے مقدمات درج کے تفتیش شروع کردی۔