چینی کا زیادہ استعمال آپ کیلئے جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے

چینی کا زیادہ استعمال آپ کیلئے جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے


لندن(24نیوز) بہت زیادہ چائے اور مشروبات کا استعمال آپ کے اعضاء پر دباؤ ڈال کر گردے کی بیماری کا خطرہ بڑھا دیتا ہے۔

ایک رپورٹ کے مطابق جو لوگ بنیادی طور پر چائے یا مشروبات پیتے ہیں ان میں گردے کی تکلیف بڑھ جاتی ہے،محققین کا کہنا ہے کہ اکثر لوگ یہ خیال کرتے ہیں کہ صحت مند مشروبات میں چینی نہیں ہوتی ، جبکہ ایک مطالعہ کے مطابق شوگر بنے ہوئے مشروبات، پھل کا رس، شراب اور چائےبھی آپ کے گردے کی بیماری کے خطرے میں اضافہ کرسکتے ہیں.

محققین کا کہنا ہے کہ وہ لوگ جو باقاعدگی سے مشروبات پیتے ہیں ان میں 61 فی صدگردوں کی بیماری کا خطرہ بڑھ جاتا ہے، اس کے علاوہ شراب اور چائے بھی گردوں کو خراب کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے ، سائنسدانوں نے اس بات کی وضاحت نہیں کی کہ شراب بڑی مقدار میں صحت کے لئے نقصان دہ ہونے کے ساتھ گردوں پر کیا اثرات مرتب کرتی ہے، ماہرین کا کہنا تھا کہ شراب کےاستعمال سے گردوں پر کشیدگی بڑھ جاتی ہےجو انسانی جسم کو نقصان پہنچاتی ہے.

این ایچ ایس کے مطابق برطانیہ میں دائمی گردے کی بیماری کی وجہ سے ہر سال تقریبا40,000سے45,000ہزار افراد کی موت ہو تی ہے، امریکہ میں عام آبادی میں مجموعی طور پر تقریبا 14 فی صد ہائی بلڈ پریشر اور ذیابیطس کی اہم وجوہات پائی جاتی ہیں، دوسری جانب جانس ہاپکنز یونیورسٹی نے 3000سے زائد افریقی اور امریکی افراد کے درمیان مشروبات پینے پر سروے کیا۔

ڈاکٹر ربولز نے رائٹرز کو بتایا کہ 'یہ بڑے پیمانے پر تسلیم کیا جاتا ہے کہ سوڈا اور میٹھا پھل مریضوں کو موٹاپے، ہائی پریشر، ذیابیطس، اور دائمی بیماریوں کو فروغ دینے کے خطروں سے بچاتاہے،ذیابیطس کی بیماری کا شکار افراد کو بھوک کم لگتی ہے ، تھکاوٹ اور کمزوری، نیند کے مسائل، ذہنی توازن کی کمی، پٹھوں کا درد، پاؤں اور ٹخنوں کی سوزش، سینے کے درد، سانس کی قلت، اور ہائی بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنا مشکل ہوتا ہے۔

حفاظتی تدابیر

تمباکو نوشی سے پرہیز، سگریٹ گردوں کے لئے نقصان دہ ہے، صحت مند وزن برقرار رکھیں، زیادہ میٹھاکھانے سے گریز کریں اور وزش کو معمول بنائیں۔