عراق میں امریکی فوجی اڈےپر حملے

عراق میں امریکی فوجی اڈےپر حملے


بغداد ( 24نیوز )مشرق وسطیٰ میں صورتحال سنگین ہے،شمالی بغدادمیں عراقی فوجی اڈےپر2راکٹ فائر کئے گئے جس سے5افرادزخمی ہوگئے، فوجی اڈےمیں امریکی فوجی تعینات تھے۔

تفصیلات کے مطابق عراق میں امریکی فوجی ٹھکانوں پر حملے شروع ہو گئے، بغداد میں امریکی سفارت خانے کے قریبی فوجی اڈے پر راکٹ فائر کیے گئے جس سے متعدد فوجی زخمی ہوئے، فوجی اڈے میں امریکی فوجی موجود تھے، ادھر عراقی شہر موصل میں بھی امریکی فوجی تنصیب پر دھماکوں کی اطلاعات ہیں،الکنڈی میں موجود امریکی بیس کرد علاقوں میں امریکی فوجیوں کا اہم ٹھکانا ہے۔

 گزشتہ روز بغداد میں امریکی حملے میں ایرانی قدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی اور عراقی کمانڈر بھی شہید ہوئے تھے، جس کے بعد عراق اور ایران کی جانب سے شدید ردعمل کا اظہار کیا گیا تھا، عراق میں بھی اس حملے کے بعد امریکا مخالف جذبات شدت اختیار کر گئے تھے کیونکہ کمانڈر ابو مہندی المہندس عراق میں انتہائی مقبول کمانڈر تھے،انہوں نے داعش کے خلاف جنگ میں بے پناہ کامیابیاں حاصل کیں تھیں، اور موصل کو شدت پسند تنظیم سے آزاد کرایا تھا۔

علاوہ ازیں ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کے بعد عراق سے امریکی فوجیوں کے انخلاء کا مطالبہ زور پکڑنے لگا ، عراقی پارلیمنٹ نے آج ہنگامی اجلاس طلب کرلیا، اجلاس میں امریکی اور دیگر غیرملکی فوج کےفوری انخلا کی قرار داد پیش کئےجانےکا امکان ہے۔