احتساب عدالت نے نواز شریف،مریم نواز کی درخواست مسترد کردی

احتساب عدالت نے نواز شریف،مریم نواز کی درخواست مسترد کردی


اسلام آباد( 24نیوز )احتساب عدالت نے نوازشریف اور مریم نواز کی جانب سے لندن فلیٹس ریفرنس کے حتمی دلائل موخر کرنے کی درخواست مسترد کردی ، نیب پراسیکیوٹر نے موقف اپنایا کہ ملزمان کے وکلاء بیان سے بھاگ رہے ہیں وکیل صفائی بولے کہ استغاثہ کے پاس جے آئی ٹی رپورٹ اور واجد ضیاءکے علاوہ کوئی ثبوت نہیں۔

 یہ بھی پڑھیں: نواز شریف نے لوڈشیڈنگ کا ملبہ نگران حکومت پر ڈال دیا

احتساب عدالت میں نواز شریف خاندان کے خلاف ریفرنس کی سماعت ہوئی ، وکیل صفائی خواجہ حارث اورامجد پرویزعدالت سے غیر حاضر رہے ، نواز شریف اور مریم نواز نے لندن فلیٹس ریفرنس میں حتمی دلائل موخر کرنے اور تینوں ریفرنسز میں ایک ساتھ سننے کیلئے درخواست دائر کر دی ۔

موقف اپنایا گیا کہ تینوں ریفرنسز اکٹھے کرنے سے متعلق اسلام آباد ہائیکورٹ نے احتساب عدالت کے فیصلے کی توثیق کی تھی نیب پراسیکیورٹرنے کہاکہ ملزمان کا موقف ہے تینوں ریفرنسزمکمل ہونے تک حتمی دلائل نہ سنے جائیں وکیل صفائی حتمی دلائل دینا نہیں چاہ رہے اوراستغاثہ کوبھی روک رہے ہیں ،ملزمان نے دفاع میں کچھ بھی پیش نہیں کیا سعید ہاشمی نے کہاکہ نیب کے پاس بھی جے آئی ٹی رپورٹ اورواجد ضیاءکے علاوہ کوئی ثبوت نہیں جو ایک ہی قسم کی چیزکودہرائی جارہے ہیں عدالت کا فیصلہ چیلنج کرنا ملزم کا حق ہے نیب پراسیکیورٹربولے ملزمان کے وکلاء بیان سے بھاگ رہے ہیں ایسا دنیا کے کسی قانون میں نہیں ہے ۔

یہ بھی پڑھیں:  خیبرپختونخوا کے نگران وزیر اعلیٰ کا اعلان

جج محمد بشیر نے دلائل مکمل ہونے پرنوازشریف کی درخواست مسترد کرتے ہوئے کہاکہ ملزمان فیصلے کیخلاف ہائیکورٹ چلے جائیں اس دوران العزیزیہ ریفرنس میں واجد ضیاءکودوبارہ طلب کرلیتے ہیں عدالت نے سماعت میں وقفہ کر دیا۔