ملکی تاریخ کی منفرد یونیورسٹی قائم کرنے کیلئے آرمی چیف میدان میں آ گئے

ملکی تاریخ کی منفرد یونیورسٹی قائم کرنے کیلئے آرمی چیف میدان میں آ گئے


اسلام آباد( 24نیوز ) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی صدارت میں نیشنل یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی کے بورڈ آف گورنرز کا اجلاس، اپنی نوعیت کی یہ پہلی یونیورسٹی رواں برس 18 ستمبرسے باقائدہ اپنا پروگرام شروع کرے گی۔
آئی ایس پی آر کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ نے اجلاس سے خطاب میں کہا کہ نوجوانوں میں تکنیکی مہارت کے فروغ کیلئے پہلی ٹیکنالوجی یونیورسٹی کا خواب پورا ہوگیا، یونیورسٹی کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے انتظامیہ کی کاوشیں قابل تحسین ہیں۔
آرمی چیف نے یونیورسٹی انتظامیہ کو ہدایت کی کہ میرٹ اور اعلی تعلیمی معیارہرحال میں برقرار رکھا جائے، مقامی اور عالمی سطح پر صنعت اس سے مستفید ہوں گے، یونیورسٹی سی پیک کی انجیئرنگ اور اعلی تعلیم یافتہ ورک فورس کی ضروریات پوری کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:چینی شخص کی گاڑی سے محبت کی مثال قائم
آرمی چیف کا کہناتھا کہ یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی ملک میں اعلی تعلیم یافتہ انجینئرز اور مختلف شعبوں کیلئے ماہر ورک فورس تیار کرے گی، یونیورسٹی اٹھارہ ستمبر سے باقاعدہ کام شروع کرے گی۔