سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے ہاوسنگ اسکیموں کی تفصیلات طلب

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے ہاوسنگ اسکیموں کی تفصیلات طلب


کراچی(24نیوز) سندھ فراہمی و نکاسئی آب کمیشن کی سماعت، کمیشن کی باز پرس پر وفاقی حکومت نے کراچی کو کے فور اور ایس تھری منصوبوں کے لئے فنڈز جاری کرنے کی یقین دہانی کرادی،کمیشن نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے بھی صوبے بھر کی ہاوسنگ اسکیمز کی تفصیلات طلب کرلیں۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں واٹر کمیشن کی سماعت ہوئی تو اہم احکامات بھی جاری کردیئے گئے۔کے فور اور ایس تھری منصوبوں کے عدم تکمیل پر کمیشن کی برہمی۔ ڈی سی ملیر محمد علی سے کمیشن نے استفسار کیا کہ کیا آپ کے فور منصوبے میں رکاوٹین ڈال رہےہیں۔ ڈی سی ملیر کمیشن کو مطمئن نہ کرسکے کمیشن کے سربراہ نے ریمارکس دیئے کہ احکامات کے باوجود کوئی پیش رفت نہیں۔ذمہ داریاں ایک دوسرے پر ڈالی جارہی ہیں۔چیف سیکرٹری کل تک وضاحت دیں ورنہ معاملہ سپریم کورٹ بھیج دیں گے۔

دوسری جانب کمیشن نے سیکریٹری بلدیات کو حکم دیا کہ تمام تعلقوں میں ایک ہفتے کے اندر ٹی ایم اوز اور دیگر عہدیداران تعینات کیے جائیں۔اس دوران وفاقی حکومت کی جانب سے کے فور منصوبے کے لئے فوری طور پر 3 ارب 17 کروڑ جاری کرنے کی یقین دہانی کردی گئی۔کمیشن نے ریمارکس دیئے کہ ہر ماہ کے فور پروجیکٹ کے کام کی رفتار چیک کریں گے۔کمیشن نے استفسار کیا کہ ایس تھری منصوبہ کب مکمل ہوگا۔چیف سیکریٹری نے کہا کہ سب کوتاہیوں کا اعتراف کرتے ہیں مگر اب صورتحال تبدیل ہوچکی۔وفاق پیسے دے ہم ذمہ داری سے خرچ کریں گے۔

واضح رہے کہ  وفاق کی جانب سے ایس 3 منصوبہ کے لئے بھی 1 ارب 35 کروڑ روپے جاری کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی۔کمیشن نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے بھی سندھ بھر کی ہاوسنگ اسکیمز کی تفصیلات طلب کرلیں ہیں اور حکم دیا ہے کہ جن ہاوسنگ اسکیمزمیں بنیادی سہولیات موجود نہیں ان کو این او سی جاری نہ کی جائے۔ جن ہاوسنگ اسکیمز میں بنیادی سہولیات نہیں ان کی این او سی منسوخ کر دی جائے۔ کمیشن کی مزید سماعت 7 مارچ تک ملتوی کردی گئی۔