سندھ ہائیکورٹ نے نجی سکولوں کے طلبہ و طالبات کو بڑی خوشخبری سنا دی

سندھ ہائیکورٹ نے نجی سکولوں کے طلبہ و طالبات کو بڑی خوشخبری سنا دی


کراچی (24 نیوز) پڑھا لکھا معاشرہ کسی بھی ملک میں ترقی اور خوشحالی کا باعث بن ہوتا ہے۔ بچوں کو اچھی سے اچھی تعلیم دلانا سبھی والدین کی خواہش ہوتی ہے۔ کراچی میں بچوں کو بنیادی تعلیم دینے والے سکول پیسے بٹورنے کی مشین بن کر رہ گئے ہیں۔مہنگائی کے دور میں گھریلو اخراجات تو پورے نہیں ہوتے۔ اس پر والدین کو دینی پڑتی ہیں بھاری بھرکم فیسیں، کاپیاں، کتابیں، یونیفارم بھی اسکول انتظامیہ کی بتائی دکان سے منہ مانگی قیمت پر خریدنا لازمی۔

یہ بھی پڑھیں:کراچی: میٹرک کے سالانہ امتحانات، نقل کا بازار گرم

 والدین کے صبر کا پیمانہ ہوا تو لبریز عدالت سے رجوع کرلیا۔ سندھ ہائیکورٹ نے صوبائی حکومت کو معاملہ کے حل کے لیے کمیٹی تشکیل دینے کا حکم دے دیا۔صوبائی حکومت نے نجی تعلیمی اداروں سے متعلق 2005 کے قانون میں ترمیم کیلئے بارہ رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔ سندھ ہائیکورٹ نے صوبائی حکومت کو معاملہ کے حل سے متعلق قانون سازی کے لیے تین ماہ کی مہلت دی ہے۔