میاں نواز شریف کو چیف جسٹس کی باتیں اچھی لگنے لگیں


اسلام آباد (24 نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ چیف جسٹس کی انتخابات ملتوی نہ ہونے سے متعلق بات اچھی تھی۔ ن لیگ کے لوگوں کو ٹارگٹ کرکے ہراساں کیا جارہا ہے۔

24 نیوز کے مطابق ن لیگ کے قائد نواز شریف کو چیف جسٹس آف پاکستان کی باتیں اچھی لگنے لگیں۔ ان کا کہنا تھا کہ چیف جسٹس کی انتخابات ملتوی نہ ہونے سے متعلق بات اچھی تھی۔ لیکن نیب سے ناراض ہی دکھائی دئیے۔ انھوں نے کہا کہ ن لیگ کے لوگوں کو ٹارگٹ کر کے ہراساں کیا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھئے: ’خواہش ہے جو معاملات اٹھائے وہ ختم کروں ورنہ نعرے لگیں گے باتیں کرکے چلاگیا‘ 

احتساب عدالت میں جمعہ کے روز شریف خاندان کے خلاف ریفرنسز پر سماعت بغیر کارروائی کے ملتوی ہو گئی۔ جس کی وجہ فاضل جج محمد بشیر کی چھٹی تھی۔ لیکن نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر عدالت میں پیش ہوئے۔

عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو میں نواز شریف پہلے تو چیف جسٹس کے انتخابات ملتوی نہ ہونے سے متعلق بیان کو سراہا۔ انھوں نے کہا کہ ہم نے جج سے خود کہا تھا سماعت کی کارروائی لائیو دکھائی جائے۔ ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ وہ اپنی بات پر قائم ہیں۔

ۢپڑھنا نہ بھولئے: نواز شریف کے بعد زرداری نشانے پر آگئے 

بعد ازاں انھوں نے الزام عائد کیا کہ نیب والے ن لیگ کے کارکنوں اور رہنماؤں کو ٹارگٹ کر کے ہراساں کر ر ہے ہیں۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم سے کہا تھا لاپتہ کارکنوں کے معاملہ کی انکوائری کرائیں۔ الیکشن کے دوران کارکنوں کی گمشدگی کا بہت دکھ اور افسوس ہے۔