پی ٹی آئی کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس،عمران خان وزیر اعظم نامزد


اسلام آباد( 24نیوز ) پاکستان تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس جاری ہے،پارلیمانی پارٹی نے عمران خان کو باقاعدہ طورپر وزیر اعظم کیلئے امیدوار نامزد کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے منتخب نمائندے شریک ہیں،ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ تحریک انصاف نے شاہ محمود قریشی کو اسپیکر قومی اسمبلی اور عمران اسماعیل کو گورنر سندھ بنانے کا فیصلہ کرلیا، چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے پارٹی کے نائب چیئرمین شاہ محمود قریشی کو اسپیکر قومی اسمبلی بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   ایک اور ن لیگی زبان کی پکڑ میں آگیا،پوزیشن کو خطرہ

ذرائع کا کہنا ہے کہ شاہ محمود قریشی سپیکر قومی اسمبلی کا منصب نہیں سنبھالنا چاہتے ہیں لیکن عمران خان نے انہیں اس منصب پر بٹھانے کا فیصلہ کیا جس کے لیے انہیں راضی بھی کرلیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق عمران خان اسمبلی میں ایک مضبوط اپوزیشن کو سنبھالنے کے لیے کسی نئے آدمی کا چانس لینا نہیں چاہتے، وہ اس عہدے کے لیے اسمبلی کا بڑا تجربہ رکھنے والے شخص کا انتخاب چاہتے ہیں اور اسی بناء پر شاہ محمود قریشی کو اس منصب کے لیے موزوں سمجھا جارہا ہے,ڈپٹی سپیکر کیلئے زرتاج گل اور شہریار آفریدی مضبوط امیدوار ہیں-

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہےکہ عمران خان نے عمران اسماعیل کو گورنر سندھ لگانے کا بھی فیصلہ کرلیا ہے اور دونوں اعلان آج پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں کردیئے جائیں گے۔

عوام سے کیے گئے تمام وعدے پورے کرینگے: عمران خان

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے وزیر اعظم نامزد ہونے کے بعد پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ عوام تبدیلی کیلئے نکلے اور اپنا فیصلہ سنایا،عوام سے کیے گئے تمام وعدے پورے کرینگے،وزراءکو بھی صحیح معنوں میں جوابدہ بنائینگے،پارٹی کے ابتدائی کارکنوں کی خدمات لائق تحسین ہیں،ستر سال بعد پی ٹی آئی نے دو جماعتی نظام کو شکست دی ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ کارکردگی کیلئے ابتدائی چھ ماہ اہم ہیں،عوام نے اقتدار میں پہنچایا ہے تو نچلے طبقے کو اوپر لے آئینگے،جب خیبر پی کے میں حکومت بنائی تو سرمایہ اور ذہانت دونوں نکل چکے تھے ہم دونوں کو لے آئے،صنعتیں بحال کیں،میرے لیئے پروٹول کول کیوں لگایا گیا،ملک ایسے نہیں چلے گا،پروٹوکول لوں گا نہ کسی کو لینے دوں گا۔