ماہر معاشیات نےخطرے کی گھنٹی بجا دی

ماہر معاشیات نےخطرے کی گھنٹی بجا دی


(24نیوز) حکومت کے سابق معاشی ترجمان ڈاکٹر فرخ سلیم نے خطرےکی کئی گھنٹیاں بجا دیں، ان کا کہنا ہےکہ دوست ممالک سے ملنے والی امداد ختم ہوچکی ہے،خطرناک معاشی صورت حال فوری اقدامات کا تقاضا کرتے ہیں۔

حکومت معاشی صورتحال میں بہتری کے دعوے کر رہی ہے مگر زمینی حقائق کچھ اور ہی کہانی بیان کر رہے ہیں، ناقص حکمت عملی کے باعث حکومت کے سابق معاشی ترجمان ڈاکٹر فرخ سلیم نے بھی خطرے کی کئی گھنٹیاں بجا دیں ہیں،انہوں نے معیشت کو درپیش مسائل کی نشاندہی کی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ملکی تاریخ میں پہلی بار خالص زرمبادلہ کے ذخائر منفی 11 ارب ڈالر ہو گئے، روپے کی قدر گرانے کا بھی کوئی فائدہ نہیں ہوا،  بجٹ خسارہ بلند ترین سطح کو پہنچ گیا،  سکلر ڈیٹ ایک ہزار 400 ارب کے قریب پہنچ چکا ہے۔

سابق معاشی ترجمان ڈاکٹر فرخ سلیم کا کہنا تھا کہ چین سے جولائی میں ملنے والے ایک ارب ڈالر جب کہ سعودی عرب سے نومبر اور دسمبر میں ملنے والے 2 ارب ڈالر ختم ہوچکے ہیں،انہوں نے کہا کہ خطرناک معاشی صورتحال فوری اقدامات کا تقاضا کرتے ہیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔