لاہور کے نوجوان نے منفرد ہیٹر تیار کرلیا

لاہور کے نوجوان نے منفرد ہیٹر تیار کرلیا


لاہور (نتاشہ رحمان) سردی بڑھی تو لاہور کے نوجوان نے منفرد ای فائر ہیٹر متعارف کروا دیا، تھری ڈی ایفیکٹ سے آتشدان میں لکڑیاں جلنے کا احساس ہوتا ہے، ای فائر ہیٹر کا خرچ صرف 15روپے فی گھنٹہ ہے۔

سردی میں اضافے نے لاہور کے نوجوان اسامہ نعیم سے منفرد ہیٹر بنوا ڈالا، دیوار پر لگےجدید ای فائر ہیٹر میں آرٹیفیشل لائٹنگ کی گئی ہے جس سےکمرے میں لکڑیاں جلنے سے گرمی پیدا ہونے کا احسا س پید ہوتاہے. کمرےکے درجہ حرارت کےمطابق کمرہ گرم ہونے کے بعد یہ ای فائر ہیٹر خودبخود بند ہوجاتا ہے۔ 

منفرد ہیٹر بنانے والے نوجوان اسامہ نعیم کا کہنا ہے کہ یہ مکمل طور پر پاکستان میں بنا ہے جس کی قیمت 15 ہزارسے شروع ہوتی ہے اور اس کا سائز آپ اپنی مرضی سے بنوا سکتے ہیں۔اسامہ نے مزید بتایا کہ ای فائر کا بجلی کا خرچ زیادہ نہیں، 15 روپے فی گھنٹے کا خرچ آئے گا۔ یہ جدید ای فائر ہیٹر خوبصورتی کے ساتھ ماحول دوست اور محفوظ بھی ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔