ایران جوہری معاہدے سے دستبردار

ایران جوہری معاہدے سے دستبردار


تہران(24 نیوز)ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد مشرق وسطیٰ کے حالات کشیدہ ہیں،امریکا سے جنگ کا خطرہ بڑھ گیا،ایران نے جوہری معاہدے سے دستبرداری کا اعلان کردیا۔

ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی تہران میں نماز جنازہ ادا کردی گئی ، جنازے میں سپریم ایرانی لیڈرآیت اللہ علی خامنہ ای بھی شریک ہیں،تہران کی تاریخ کا سب سے بڑا جنازہ، لاکھوں افراد کی شرکت،جنرل قاسم سلیمانی کی تدفین کل آبائی شہرکرمان میں ہوگی۔

دوسری جانب عراقی دارالحکومت بغداد میں امریکی حملے میں ایرانی قدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کے بعد ایران نے 2015 کی ایٹمی ڈیل کی پاسداری سے دستبرداری کا اعلان کردیا۔ایرانی نیوز ایجنسی کے مطابق ایران یورینیم افزودگی کے لیے حدود اور ذخیرے کی مقدار کی پاسداری نہیں کرے گا۔

p>

یاد رہے3 جنوری کو ایران کے اہم ترین کمانڈر میجر جنرل قاسم سلیمانی کی گاڑی کو عراق کے دارالحکومت بغداد کے ائیرپورٹ کے قریب امریکی صدر کے حکم پر نشانہ بنایا گیا اور ان کی گاڑی پر راکٹ فائر کیے گئے جس میں قاسم سلیمانی جاں بحق ہوگئے تھے۔ جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کے بعد ایران نے بدلہ لینے کا اعلان کررکھا ہے اور اب ایران نے جنرل سلیمانی کی تدفین سے قبل ہی 2015 کی ایٹمی ڈیل سے دستبرداری کا اعلان کیا ہے۔ 

ایران پر حملے کیلئے کانگریس سے منظوری کی ضرورت نہیں

ادھر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ ایران پر حملے کیلئے کانگریس سے منظوری کی ضرورت نہیں، میرے بیان ہی کانگریس کیلئے نوٹیفیکیشن ہیں،امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے  دھمکی آمیز ٹویٹ کے جواب میں پاسداران انقلاب کے سابق سربراہ محسن رضائی نے   کہا ہے کہ  حملہ کیا تو اسرائیلی شہروں حائفہ اور تل ابیب کو راکھ بنا دیں گے۔

مانچسٹر میں مظاہرہ،امریکا مخالف نعرے بازی

جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کیخلاف مانچسٹر کے پکاڈلی گارڈن میں پرامن مظاہرہ کیا گیا۔ شہدا کی یاد میں شمعیں روشن کی گئیں، مظاہرین نے  امریکا کیخلاف شدید نعرے بازی بھی کی۔

Azhar Thiraj

Senior Content Writer