آرمی ایکٹ ترمیمی بل کل منظور کیے جانے کا امکان

آرمی ایکٹ ترمیمی بل کل منظور کیے جانے کا امکان


اسلام آباد(24 نیوز) پارلیمنٹ   میں کل آرمی ایکٹ میں ترمیم کی منظوری دیئے جانے کا امکان، کابینہ اجلاس ملتوی کردیا گیا۔

آرمی ایکٹ میں تبدیلی اس وقت سب سے بڑا سیاسی مسئلہ بنا ہوا ہے، آرمی ایکٹ میں ترمیم کا بل کل منظور کیے جانے کا امکان ہے،جماعت اسلامی ،جے یو آئی (ف)سمیت تمام جماعتوں نے اس بل کی حمایت کرنے کا اعلان کیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے تمام وزرا کو پارلیمنٹ میں حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے، وزیراعظم نے حکومتی اور اتحادی جماعتوں کی پارلیمانی پارٹیوں کا اجلاس بھی کل صبح 10بجے طلب کرلیا۔

ادھر آرمی ایکٹ میں ترمیم پر قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کا اجلاس کچھ دیر بعد شروع ہوگا، کمیٹی کا 3جنوری کوہونے والا اجلاس قواعد و ضوابط کے تحت نہ ہونے پر کالعدم قرار دے دیا گیا تھا۔

چوہدری برادران کی مولانا فضل الرحمان سے 2 ملاقاتیں،منانے میں ناکام

دوسری جانب مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین ، چوہدری پرویز الٰہی  مولانا فضل الرحمان کو منانے میں ناکام ہوگئے ہیں،دونوں رہنمائوں نے مولانا فضل الرحمان سے 2 بار ملاقات کی ۔

 ملاقات کے بعد چوہدری برادران میڈیا کا سامنا کیے بغیر چلتے بنے جبکہ مولانا فضل الرحمان کا میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آپ سب کو پتہ ہے چوہدری برادران کیوں آئے تھے مگر ہم اس قانون کو ووٹ نہیں دیں گے۔ساری اپوزيشن کا ماننا ہے کہ یہ اسمبلی جعلی ہے، جے یو آئی ف اپنے مؤقف پر قائم رہتے ہوئے اس اسمبلی کے قانون سازی کا حق تسلیم نہیں کررہی، عملی انداز کیا ہوگا اس پر غور کررہے۔

سربراہ جے یو آئی ف کا کہنا تھا کہ وہ کسی بھی آپشن کی طرف جاسکتے ہيں لیکن حمایت نہیں ہوسکتی، مخالفت میں ووٹ دینے یا غیر جانبدار رہنے پر غور کررہے ہیں، آئندہ کی قانون سازی پر کیس ٹو کیس دیکھیں گے۔

Azhar Thiraj

Senior Content Writer