ہندوستان دہشتگردی کا گڑھ بن گیا، تعلیمی درسگاہیں بھی غیر محفوظ

ہندوستان دہشتگردی کا گڑھ بن گیا، تعلیمی درسگاہیں بھی غیر محفوظ


دہلی (24نیوز) بھارتی دارلحکومت دہلی کی جواہر لال یونیورسٹی میں آرایس ایس کے غنڈوں نے طلبہ پر حملہ کردیا ۔ متنازع شہریت کے قانون اور فیسوں میں اضافے کیخلاف احتجاج کرتے طلبہ ڈنڈے برسائے ،اسٹوڈنٹس یونین کی صد ر شدید زخمی ہوگئیں، اپوزیشن لیڈر راہول گاندھی کا کہنا ہے کہ مودی حکومت فاشسٹ ہے.

بھارتی دارالحکومت دہلی کی جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں طُلبہ پر آر ایس ایس کے غنڈوں نے حملہ کردیا ، نوجوان شہریت کے متنازع قانون اور فیسوں میں اضافے کے خلاف احتجاج کر رہے تھے۔ راہول گاندھی نے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مودی حکومت فاشٹ ہے.

زخمی ہونے والی صدر اسٹوڈنٹ یونین کا کہنا ہے کہ نقاب پوشوں نے تشدد کرکے انہیں لہولہان کردیا،پروفیسروں کے مطابق آرایس ایس کے غنڈوں نے طلبہ پر بڑے پتھر مارے اور ڈنڈے برسائے جس سے کئی طلبا کے سر پھٹ گئے۔  غنڈوں نے یونیورسٹی میں کاروں کو بھی نقصان پہنچایا۔

طلبہ نے بتایا کہ غنڈوں نے متنازعہ شہریت اور فیسوں میں اضافے کےخلاف احتجاج کرنے والے طبہ کو خوفزدہ کرنے کے لیے حملہ کیا۔ اس واقعے پر نئی دلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجری وال نے صدمے کا اظہار کیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق یہ حملہ اکھیل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے غنڈوں نے کیا جو آر ایس ایس اور بی جے پی کی ذیلی تنظیم ہے.

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔