لوگوں کی عدالت،لوگوں کا فیصلہ،سرعام کلہاڑیوں سے نوجوان قتل


خانیوال(24نیوز) کہاں ہے انصاف؟کہاں ہے قانون؟ لوگوں کی عدالت،لوگوں کا فیصلہ،نوجوان کو سرعام قتل کردیا گیا۔

خانیوال کے نواحی گاؤں چھب میں ظلم کی انتہا ہوگئی، چند افراد خود ہی منصف بن گئے، اور نوجوان کو موت کی سزا دے ٍڈالی۔نوجوان لیاقت کو ڈاکو قرار دے کر بڑی بے رحمی سے کلہاڑیاں اور ڈنڈے مار کر لہو لہان کر دیا، لیاقت ایک گھنٹہ موت و حیات کی کشمکش میں رہا، بالآخر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا، پولیس اور عوام تماشائی بنے رہے، پولیس نے قاتلوں کے بجائے مقتول کیخلاف ہی مقدمہ درج کرلیا۔

یہ بھی پڑھیں: پشاور میں لڑکی کو برہنہ کرنے والا ملزم گرفتار

ٹوئنٹیی فور نیوز نے لرزہ خیز واردات کی فوٹیج حاصل کر لی، نوجوان کے والدین نے الزام عائد کیا ہے کہ مخالفین نے پولیس سے ساز باز کرکے ذاتی رنجش پر ان کے بیٹے کو قتل کیا۔ سماجی رہنما طاہرہ عبداللہ نے کہا کہ نگران حکومت اور کچھ نہیں کر سکتی تو کم از کم پولیس کا نظام درست کر دے، جس دن پولیس کا نظام درست ہوگیا ملک میں کسی فرد کو قانون ہاتھ میں لینے کی جرات نہیں ہوگی۔
ڈی پی اوخانیوال رضوان عمرگوندل نے موقف دینے سے انکار کر دیا، مقتول کے لواحقین نے چیف جسٹس سے انصاف فراہم کرنے کی اپیل کی ہے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔