ن لیگ نے نگران وزیر اعظم کیلئے بڑی مشکل کھڑی کر دی

ن لیگ نے نگران وزیر اعظم کیلئے بڑی مشکل کھڑی کر دی


اسلام آباد( 24نیوز )قرض جو بھی حکومت لے واپس تو وقت پر کرنا ہوگا، نگران حکومت کو دو ماہ کے دوران تقریبا 46 کھرب روپے کے اندرونی قرضے واپس کرنے پڑیں گے،قرض کی واپسی بینکوں سے ہی نیا قرض لے کر کی جائے گی۔
جون اور جولائی کے دوران حکومت نے مجموعی طور پر 45 کھرب 77 ارب 13 کروڑ روپے کے اندرونی قرضے واپس کرنے ہیں،، اسٹیٹ بینک کے مطابق اس سلسلے میں منی مارکیٹ سے 42 کھرب 50 ارب روپے کے نئے قرضے لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، شڈول کے مطابق دو ماہ کے دوران 5 مرتبہ ٹرثری بلز کی نیلامی کی جائے گی،، جن سے مجموعی طور پر 41 کھرب 50 ارب روپے کے حصول کا ٹارگٹ رکھا گیا ہے۔

 یہ خبر بھی پڑھیں: نگران وزیر اعلیٰ پنجاب:حکومت اور اپوزیشن میں بریک تھرو ہونے کا امکان
جبکہ ایک کھرب روپے کے حصول کے لیے اس دوران دو مرتبہ پاکستان انوسٹمنٹ بانڈز کی فروخت کی جائے گی، تاہم ہدف کے مطابق قرض ملنے کی صورت میں بھی حکومت کو قرضوں کی واپسی کے لیے مزید 3 کھرب 27 ارب 13 کروڑ روپے کی ضروت ہو گی۔