نہال ہاشمی اپنی حرکتوں سے باز نہ آئے،عدالت نے علاج ڈھونڈ لیا


اسلام آباد(24نیوز)مسلم لیگ ن کے رہنماﺅں نے عدالت پر تنقید کواپنی ضد بنالیا ،توہین عدالت کے مقدمات کورٹ میں ہونے کے باوجود اپنی زبان درازی جاری رکھے ہوئے ہیں،حال ہی میں جیل کاٹ کر باہر آنیوالے نہال ہاشمی جن کو توہین عدالت کے جرم میں سینیٹر شپ سے بھی ہاتھ دھونا بیٹھا اپنی حرکتوں سے باز نہیں آرہے،عدالت نے ایک بار پھر ان کو سبق سکھانے کی ٹھان لی ہے۔

سپریم کورٹ میں انٹرا کورٹ اپیل کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان کوسابق سینیٹر نہال ہاشمی کی جیل سے رہائی کے بعد گالیوں والی ویڈیو چلائی گئی جس پر نہال ہاشمی کے وکیل شرم سے پانی پانی ہو گئے،چیف جسٹس ثاقب نثار نے لیگی رہنما کے وکیل سے کہا کہ سن لیں نہال ہاشمی کیا کہہ رہے ہیں۔

اس پر کامران مرتضیٰ نے کہا کہ نہال ہاشمی کے الفاظ میرے لئے شرمند گی ہیں،ایسے الفاظ کے استعمال پر معذرت خواہ ہوں، نہال ہاشمی کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ گالیوں کے الفاظ عدالتی حکم نامے میں نہ لکھیں جائے۔

یہ بھی پڑھیے۔۔۔۔۔چیئرمین سینیٹ کا انتخاب حکومت،اپوزیشن دونوں کیلئے امتحان بن گیا

اس پر چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں ان الفاظ کو عدالتی حکم نامے میں لکھوانے میں کوئی شرم نہیں، نہال ہاشمی کی گالیوں کے الفاظ سب پاکستانیوں نے سنے۔عدالت نے نہال ہاشمی کل عدالت طلب کر لیا۔