کون شکنجے میں پھنسے گا،سپریم کورٹ نے فیصلہ کر لیا

کون شکنجے میں پھنسے گا،سپریم کورٹ نے فیصلہ کر لیا


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ میں ن لیگ کے دانیال عزیز اور طلال چودھری کے خلاف توہین عدالت ازخود نوٹس کی سماعت ہوئی، عدالت نے دانیال عزیز پر آئندہ سماعت پر فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں ن لیگ کے رہنمائوں طلال چودھری اور دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت پر ازخود نوٹس کی سماعت ہوئی۔ دانیال عزیز کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ 9 ستمبر 2017 کو نشر کی گئی خبر میں سرخی غلط ہے۔ میڈیا میں نشر کردہ تقریر بھی نجی محفل کی تھی۔جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس میں کہا کہ دانیال عزیز کے جواب سے مطمئن نہیں۔بادی النظر میں دانیال عزیز کے خلاف توہین عدالت کا مقدمہ بنتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:چیف جسٹس نے چیئرمین سی ڈی اے کی تقرری کانوٹس لے لیا، ریکارڈ سمیت طلب

 دوسری جانب طلال چودھری کیخلاف توہین عدالت ازخود نوٹس میں طلال چودھری کے وکیل کامران مرتضی نے موقف اپنایا کہ طلال چودھری کے مبینہ بیانات پر مبنی سی ڈی فراہم نہیں کی گئی۔ عدالت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو طلال چودھری کے وکیل کو سی ڈی فراہم کرنے کی ہدایت کر دی۔ عدالت نے طلال چودھری کو آئندہ سماعت پر حاضری سے اسثثنی دیتے ہوئے مزید سماعت 8 مارچ تک جبکہ دانیال عزیز کیس کی سماعت 13 مارچ تک ملتوی کر دی۔