مولانا کا وزیراعظم کے استعفے سےپیچھے ہٹنے کا اشارہ

مولانا کا وزیراعظم کے استعفے سےپیچھے ہٹنے کا اشارہ


اسلام آباد(24نیوز) مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم کے استعفے سےپیچھے ہٹنے کا اشارہ دے دیا۔دھاندلی کی تحقیقات کیلئےکمیشن بنانے کی حکومتی تجویزمستردکردی۔ کہتے ہیں وزیراعظم کے استعفےسے ہٹ کربھی بات ہوسکتی ہے کمیشن نہیں الیکشن چاہتے ہیں۔  چودھری پرویزالہٰی کا کہنا ہے کہ انشااللہ جلد کوئی حل نکل آئے گا۔

آزادی مارچ کے روح رواں مولانا فضل الرحمان شہر اقتدار میں آئے تو تھے وزیراعظم کا استعفیٰ لینے  مگر اب وہ شایدسمجھ گئے ہیں کہ شاید یہ معرکہ اب سرہونے والانہیں۔اس لئے انہوں نے بھی لچک دکھانا شروع کردی ہے۔کہتے ہیں وزیراعظم کے استعفےسے ہٹ کربھی بات ہوسکتی ہے۔

مولانا فضل الرحمان گزشتہ رات چودھری شجاعت اور چودھری پرویز الہٰی کی رہائش گاہ پر خود پہنچےجہاں ملاقات میں دھرنا ختم کرنے سمیت اہم امورپر غور کیا گیا۔ میڈیا سے گفتگو میں مولانا کاکہنا تھا کہ مذاکرات سے انکار نہیں کیا لیکن انکے مطالبات کو سنجیدگی سے لیا جائے۔

مولانافضل الرحمان نے دھاندلی کی تحقیقات کیلئےکمیشن بنانے کی حکومتی تجویزمستردکرتے ہوئے کہا کہ دوبارہ الیکشن کے مطالبے پر قائم ہیں۔  جتنی جلدی فیصلہ کروگے، اتناجلدی معاملات ٹھیک ہوجائیں گے۔احتساب کےنام پرانتقام کاڈرامہ مزیدنہیں چلےگا۔

سپیکرپنجاب اسمبلی چودھری پرویزالہٰی کاکہنا  تھا  کہ مولانا فضل الرحمان سے ملک کی موجودہ صورتحال پربات چیت ہوئی ہے۔معاملات کوحل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ انشااللہ جلد کوئی حل نکل آئے گا۔

چودھری برادران مولانا سے ملاقات کےبعد پرامید ہیں کہ مذاکرات جاری رہے تو جلد ہی سیاسی ماحول کو ٹھنڈا کرنے میں مددملے گی ۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔