"دہشت گردی کے خاتمے میں پاک فوج کا کردار قابل تعریف "


لاہور( 24نیوز )ملک بھر میں آج یوم دفاع ملی جوش و جذبے سے منایا جارہا ہے،یہ ملکی تاریخ کا اہم ترین دن ہے،جو ستمبر 1965کی جنگ کے ان دنوں کی یاد دلاتا ہے جب پاکستانی افواج اور قوم نے بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا۔
یوم دفاع و شہداءکا آغاز نمازِ فجر کے بعد مساجد میں ملکی سلامتی و ترقی کے لیے خصوصی دعاﺅں سے ہوا۔یومِ دفاع کے سلسلے میں مزارِ قائد پر گارڈز کی تبدیلی کی پ±ر وقار تقریب ہوئی، جہاں پاکستان ایئرفورس اصغر خان اکیڈمی کےکیڈٹس نے مزارِ قائد پر گارڈز فرائض سنبھال لیے، جن میں 5 لیڈی کیڈٹس بھی شامل ہیں۔
تقریب کے مہمان خصوصی ایئر وائس مارشل ندیم صابر تھے، جنہوں نے پرچم کشائی کی، مزار پر پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی،گیریژن کمانڈر میجر جنرل محمد عامر نے صبح لاہور میں مزارِ اقبال پر حاضری دی، پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی۔ پاک فوج کے چاق چوبند دستے نے اس موقع پر سلامی بھی دی۔ میجر جنرل محمد عامر نے مہمانوں کی کتاب میں تاثرات بھی درج کیے
یوم دفاع و شہدا کے موقع پر نیول ہیڈکوارٹرز اسلام آباد میں بھی پر وقار تقریب کا انعقاد کیا گیا، جس کے دوران سربراہ پاک بحریہ کا پیغام پڑھ کر سنایا گیا،وائس چیف آف نیول اسٹاف ایڈمرل کلیم شوکت تقریب کے مہمان خصوصی تھے، جنہوں نے یادگار شہدا  پر پھول رکھے اور فاتحہ خوانی کی۔ایڈمرل کلیم شوکت کا اس موقع پر کہنا تھا کہ یہ دن ہمیں حوصلے اور ثابت قدمی کی یاد دلاتاہے، جب پاکستانی قوم نے 1965 کی جنگ میں اپنے سےکئی گنا بڑے دشمن کا مقابلہ کیا۔


یوم دفاع و شہداء کے موقع پر کراچی کے علاقے ملیر چھاونی میں بھی پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا، جس کے دوران پاک فوج کے چا ق و چوبند دستوں نے مارچ پاسٹ کیا۔تقریب کے دوران پاک آرمی کے زیرِ استعمال الخالد اور الضرار ٹینکوں، بکتربند گاڑیوں اور ریڈار سسٹم سمیت دیگر ہتھیاروں کی بھی نمائش کی گئی۔


مرکزی تقریب جنرل ہیڈکوارٹرز (جی ایچ کیو) راولپنڈی میں ہوگی، جس میں وزیراعظم عمران خان بطور مہمان خصوصی شرکت کریں گے، وزیراعظم عمران خان نے یوم دفاع کے موقع پر اپنے پیغام میں دہشت گردی اور شدت پسندی کے خاتمے میں افواج پاکستان کی جرات کوسراہتے ہوئے کہا کہ افواجِ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں۔


وزیراعظم نے کہا کہ ہم اپنے ہمسایوں سمیت پوری دنیا سے برابری کی بنیاد پر باہمی تعاون کو فروغ دینا چاہتے ہیں، عالمی طاقتیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و تشدد کی روک تھام کے لیے اپنا کردار ادا کریں،ساتھ ہی انہوں نے شہداء اور غازیوں کو بھی سلام عقیدت پیش کیا۔

لاہور کے فورٹریس سٹیڈیم میں پاک فوج کی پریڈ
لاہور کے فورٹریس سٹیڈیم میں پاک فوج کی پریڈ جاری ہے جس میں وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار،گورنر پنجاب چودھری محمد سرور ، پاک فوج کے اعلیٰ افسران شریک ہیں،شہریوں کے بڑی تعداد نمائش کو دیکھنے وہاں پہنچ چکی ہے،پریڈ میں پاک فوج کے جوان اپنی دفاعی صلاحیتوں کا مظاہرہ کررہے ہیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے اپنے پیغام میں کہا کہ شہدا اور غازیوں کی جرأت اور بہادری کو سلام پیش کرتا ہوں، نئے پاکستان میں پوری قوم نئے جوش اور ولولے کے ساتھ یوم دفاع و شہداء منا رہی ہے۔ پاک افواج نے دفاع وطن کی جنگ میں بہادری کی بےمثال داستانیں رقم کیں، 65ء کی جنگ میں پاک افواج دشمن کے سامنے سیسہ پلائی دیوار ثابت ہوئی اور پاک افواج نے پاکستان پر جارحیت کرنے والے دشمن کو منہ توڑ جواب دیا۔

پشاور کے کرنل شیر خان شہید سٹیڈیم میں تقریب
پشاور کے کرنل شیر خان شہید سٹیڈیم میں بھی تقریب جاری ہے، جس میں پاک فوج کے اعلیٰ افسران شریک ہیں،شہریوں کے بڑی تعداد نمائش کو دیکھنے وہاں پہنچ چکی ہے،پریڈ میں پاک فوج کے جوان اپنی دفاعی صلاحیتوں کا مظاہرہ کررہے ہیں،شہری پاک فوج اور پاکستان زندہ باد کے نعرے لگا رہے ہیں۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے یوم دفاع سے متعلق اپنے پیغام میں شہدا کو سلام پیش کیا اور کہا کہ وطنِ عزیز کے دفاع کی خاطر جام شہادت نوش کرنے والے ہمارے ہیرو ہیں، انہیں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔یومِ دفاع کو شایانِ شان انداز میں منانا ہی ملکی سرحدوں اور جمہوریت کی حفاظت ہے، انتہا پسندی و عسکریت پسندی بنیادی خطرہ ہے، تمام قوم و اداروں کو دفاعِ وطن کی خاطر ایک پیج پر ہونا ہوگا۔شہید بھٹو نے خطے میں بھارت کے جوہری تسلط آمیز ارادوں کو بھانپ لیا تھا اس لیے انہوں نے سیکیورٹی توازن برقرار رکھنے کے لیے جوہری پروگرام کی بنیاد رکھی۔

امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کا اپنے پیغام میں کہنا تھا کہ پاک وطن کے دفاع کے لیے قوم تن من دھن قربان کرنے کو تیار ہے، سرحدوں کی حفاظت کے لیے جانیں نچھاور کرنے والے قوم کے محسن ہیں۔ قوم اپنے شہدا کی قربانیوں کو کبھی فراموش نہیں کرے گی، ہمیں پاکستان کے جغرافیہ کے ساتھ اس کے نظریہ کی بھی حفاظت کرنا ہوگی۔

پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے یوم دفاع پر اپنے پیغام میں کہا کہ قوم 1965 کی جنگ جیسا جذبہ برقرار رکھے، عسکریت پسند اور انتہا پسند قوم کے دشمن ہیں، قوم وطن کی خاطر جانیں قربان کرنے والوں کو خراج عقیدت پیش کرتی ہے۔

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کا یوم دفاع پر اپنے پیغام میں کہنا ہے کہ 6 ستمبر 1965 کو افواج پاکستان نے دشمن کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا تھا، آزادی کی حفاظت کرنا بخوبی جانتے ہیں، دشمن کسی غلط فہمی میں نہ رہے۔ ضرورت پڑنے پر کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے، جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔

گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں 6 ستمبر کا دن بے انتہا اہمیت رکھتا ہے، 1965ء میں دشمن کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیکر تاریخ رقم کی گئی۔ اپنے عظیم شہداء کی قربانیوں کو رائیگاں نہیں جانے دیں گے، وطن کے تحفظ، سالمیت اور دفاع کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے یوم دفاع پر اپنے پیغام میں کہا کہ قوم 1965ء کی طرح آج بھی متحد ہے، قوم دشمن کے ارادوں کو ناکام بنانے کے لیے پوری طرح پرُ عزم ہے۔  پاک فوج نے دہشت گردوں کے خلاف شاندار کامیابیاں حاصل کیں، مسلح افواج کا عزم آج بھی اتنا ہی بلند ہے جتنا 1965ء کی جنگ کے دوران تھا۔

ویڈیو دیکھیں: