فرض کی راہ میں جام شہادت نوش کرنے والے کوئٹہ کے سپوت

01:41 PM, 6 Sep, 2018

اظہر تھراج

کوئٹہ ( 24 نیوز)فرض کی راہ میں جام شہادت نوش کرکے امر ہونیوالے کوئٹہ کے تین سپوتوں نے قوم کا سر فخر سے بلند کردیا،عوام آج انہیں یاد کرکے خراج عقیدت پیش کررہے ہیں۔
تفصیلات کے مطابق   کوئٹہ سے تعلق رکھنے والا بم ڈسپوزل ٹیم کے کمانڈر عبدالرزاق ہمیشہ سے امن دشمنوں کے ناپاک عزائم ناکام بناتے رھے؎14فروری2017کو بھی وہ ایک بم کو ناکارہ بنارہا تھا کہ دھماکے میں شہید ہو گیا ، شہید کی ماں فخر محسوس کرتی ہے کہ اس کےبیٹے نے ملک کی خاطر اپنی جان کا نذرانہ پیش کیا۔ایسا ہی ایک دھرتی ماں کا سپوت پولیس اہلکار کاشف بھی ہے جو 23 جون 2017 کو آئی جی آفس کے سامنے خود کش حملہ آور کو روکتے ہوئے اپنی جان قربان کر کے خود کو امر کر گیا، کاشف کی ماں اپنے بیٹے کی قربانی پر فخر کرتے ہوئے کہتی ہے کہ ملک کے لئے میرے دو بیٹے اور بھی حاضر ہیں۔
9نومبر2017 نمرہ کے بابا پولیس اہلکار رمضان اس سے وعدہ کر گئے کہ وہ واپسی پر اسکی سالگرہ کا کیک کاٹیں گے مگر دہشت گردوں کے حملے میں وہ شہید ہوگئے اور اس سرزمین سے کیا وعدہ پورا کر دیا ۔
شجاعت ،بہادری اور ہمت پاک سرزمین کے سپوتوں کی میراث رہی ہے، ہمارے تحفظ کی خاطر انہوں نے اپنی خوشیاں قربان کر دیں، یہ قرض ہم کبھی نہیں اتار سکتے، پوری قوم یوم دفاع کےموقع پر شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتی ہے۔

مزیدخبریں