""اسحاق ڈار کو ایسی چک پڑی یہاں سارا معاملہ چکا گیا""

04:41 PM, 6 Sep, 2018

اسلام آباد ( 24 نیوز) چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں 3  رکن بنچ نے اسحاق ڈار کی وطن واپسی سے متعلق کیس کی سماعت کرتے ہوئے حکومت اور متعلقہ فریقین کو10 دن میں اقدامات کرنے کی ہدایت کی ہے۔

 تفصیلات کے مطابق سماعت کے دوران چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نےحکومت اور متعلقہ فریقین کو10 دن میں اقدامات کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ ایک شخص لندن کی گلیوں میں گھوم رہا ہے، وطن واپس آنے کے کیے تیار نہیں، عدالت بلائے تو کہتا ہے میرے مسل کھچ گئے ہیں۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ بتایا جائے اگران کا پاسپورٹ منسوخ کریں تو کیا نتائج برآمد ہوں گے جس پرایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ وہ پناہ لے کر ہی وہاں رہ سکتےہیں۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ایسا ہے تو لے لیں پناہ اور وہاں بتائیں کہ پاکستانی عدالتیں ان کے ساتھ زیادتی کررہی ہیں اور تو کوئی جواز نہیں ان کے پاس۔ اسحاق ڈارکو ایسی"چک "پڑی کہ یہاں توسارا معاملہ ہی چکا گیا۔ 

چیف جسٹس نے مزید استفسار کیا کہ موجودہ حکومت نے اس معاملے میں اب تک کیا ایکشن لیا ہے؟ جس پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے بتایا کہ نیب نےانہیں اشتہاری قرار دے دیا ہے۔ عدالت نے تمام اداروں کو مشاورت کی ہدایت کرتے ہوئے منگل کو دوبارہ پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔

 

مزیدخبریں