خود احتسابی؟خیبر پختونخوا حکومت نے میرٹ کی دھجیاں اڑادیں

خود احتسابی؟خیبر پختونخوا حکومت نے میرٹ کی دھجیاں اڑادیں


پشاور( 24نیوز )خیبر پختون خوااحتساب کمیشن میں وسیع پیمانے پر بے ضابطگیاں سامنے آگئیں، ایف اے پاس کو ایڈیشنل ڈائریکٹر تعینات کردیا گیا۔ مسترد ہونے والوں کو بھی نوکریاں مل گئیں، نیب نے نوٹس لیکر تحقیقات شروع کردیں۔

خیبر پختون خواہ حکومت نے خود احتسابی کا نعرہ بلند کیا مگر خود ہی اس کی دھجیاں اڑادیں، نیب ذرائع کاکہنا ہے کہ احتساب کمیشن میں ایڈیشنل ڈائریکٹر سے لوئر کلرک تک بھرتیوں میں بڑے پیمانے پر بے ضابطگیاں پائی گئی ہیں۔

ٹوئنٹی فورنیوز کو موصولہ تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل ڈائریکٹر انوسٹی گیشن کے لئے بی اے کی شرط رکھی گئی تھی لیکن اسے نظر انداز کرتے ہوئے ایف اے پاس کا تقرر کردیا گیا، بعض امیدواروں کی عمر زیادہ ہونے کے باوجود انہیں ملازمت دیدی گئی۔

حکومت نے جانے سے پہلے عوام کو خو شخبری دینے کی ٹھان لی

بعض امیدواروں کی انٹرویو شیٹ میں نو لکھا تھا لیکن جادوئی کمال سے اسے یس کردیاگیا۔اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی اسامیوں پر بھی میرٹ سے ہٹ کر تقرریاں کی گئیں۔ ڈائریکٹر فنانس اور پی ایس او کی تقرری بھی خلاف ضابطہ کی گئی۔

ستم ظریفی تو یہ دیکھئے کہ غیر قانونی بھرتی ہونے والے 96 افسر وں کو مستقل بھی کردیا گیا۔۔ نیب نے معاملے کی چھان بین شروع کردی ہے۔ نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ جلد ذمہ داروں کو طلب کرکے تحقیقات کی جائیں گی۔