عمران خان کا 2 حلقوں سے کامیابی کا نوٹیفکیشن روک لیا گیا

عمران خان کا 2 حلقوں سے کامیابی کا نوٹیفکیشن روک لیا گیا


24نیوز :عمران خان کی جانب سے عام انتخابات میں ووٹ دکھا کر ڈالنے پر این اے 53 کی کامیابی کا نوٹیفیکیشن ضابطہ اخلاق کہ خلاف ورزی کے تحت روکا گیا ہے۔ عام انتخاب میں کامیاب نومنتخب اراکین وقومی وصوبائی اسمبلی کیلیےانتظار کی گھڑیاں ختم،  الیکشن کمیشن نے 814 قومی و صوبائی اسمبلیوں کے حلقوں کے کامیابی کے نوٹیفیکیشن جاری کر دیے۔

قومی و صوبائی اسمبلی کے حلقوں کے نوٹیفکیشن روکے گئے، قومی اسمبلی کے 9 حلقوں میں سے سب سے زیادہ تحریک انصاف کے نوٹیفکیشنز روکے گئے ہیں۔الیکشن کمیشن نے انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر چیرمین تحریک انصاف عمران خان کے 3 حلقوں کے کامیابی کے نوٹیفیکشن مقدمات سے مشروط کردیے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:پی ٹی آئی رہنماؤں کے پارلیمنٹ لاجز میں من پسند فلیٹس پر قبضے 

عمران خان کے این اے 35 بنوں، این اے 95 میانوالی اور این اے 243 کراچی کا مشروط نوٹیفیکیشن جاری کردیے گئے ہیں، عمران خان کی جانب سے عام انتخابات میں ووٹ دکھا کر ڈالنے پر این اے 53 کی کامیابی کا نوٹیفیکیشن ضابطہ اخلاق کہ خلاف ورزی کے تحت روکا گیا ہے۔اسطرح این اے 131 لاہور کیس، لاہور ہائی کورٹ کے احکامات پر روک دیا گیا ہے 840 میں سے 26 قومی و صوبائی اسمبلی کے حلقوں کے نوٹیفکیشن روکےگئے ہیں۔

پڑھنا نہ بھولیں:سندھ میں تحریک انصاف، ایم کیو ایم کی تگڑی اپوزیشن کا لیڈ ر کون ہوگا؟ 

قومی اسمبلی کے 9 پنجاب اسمبلی کے 5، سندھ اسمبلی کے 6 خیبرپختونخوا3 اور بلوچستان کے تین حلقوں کے نوٹیفیکشن مختلف وجوہات پر روک دیے ہیں۔این اے 53 اسلام آباد، این اے 90 سرگودھا، این اے 91 سرگودھا کے حلقوں کے کامیابی کے نوٹیفیکیشن روکے گئے، این اے  108 فیصل آباد، این اے 112 ٹوبہ ٹیک سنگھ ، این اے 131 لاہور، این اے 140 قصور، این اے 215 سانگھڑ اور این اے 271 کیچ کے بھی نوٹیفکیشن روکے گئے۔

یہ خبر ٖرور پڑھیں:عمران خان بغیر پروٹوکول پشاور کی سڑکوں پرگھومنے لگے

ضرور پڑھیں:انکشاف، 23 جون 2019

 این اے 60 راولپنڈی اور این اے 103 فیصل آباد میں انتخاب نہ ہونے کے باعث نوٹیفیکیشن جاری نہیں کیا گیا۔

شازیہ بشیر

Content Writer