ذاتی حیثیت میں امریکی فیصلے کی سخت مذمت کرتا ہوں: نواز شریف


لندن(24نیوز): سابق وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کادرا لحکومت تسلیم کرنے کی شدید مذمت  کرتا ہوں۔ امریکی فیصلہ پاکستان سمیت امت مسلمہ میں تشویش ہے۔

سابق وزیراعظم نوازشریف نے امریکی فیصلے کے ردعمل پر کہا کہ امریکی انتظامیہ کے فیصلے سے سخت صدمہ پہنچا اور مایوسی ہوئی، پاکستان اور امت مسلمہ میں غم وغصے کی لہر دوڑ گئی ہے کہ امریکی انتظامیہ کے فیصلے سے سخت صدمہ پہنچا اور مایوسی ہوئی ہے، اس اقدام سے پاکستان اور امت مسلمہ میں غم وغصے کی لہر دوڑ گئی ہے، اپنے ایک بیان میں انہوں نے امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے پر سخت ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ(ن) اور ذاتی حیثیت میں امریکی فیصلے کی سخت مذمت کرتا ہوں۔

اقدام عالمی قوانین،سلامتی کونسل اور سابق امریکی صدر کی اعلانیہ پالیسی کی خلاف ورزی ہے۔ نوازشریف نے کہا کہ ترک صدر کی طرف سے او آئی سی کا اجلاس بلانے کی مکمل حمایت کرتا ہوں، امریکی فیصلے سے قانون کی بالادستی اور عالمی اقدار کو سخت دھچکا لگا ہے۔