وزیراعظم عمران خان کا ٹرمپ کو کرارا جواب

وزیراعظم عمران خان کا ٹرمپ کو کرارا جواب


اسلام آباد(24نیوز) وزیر اعظم عمران خان کا  کہنا تھا کہ پاکستان امریکا کی بہت جنگ لڑ چکا ہے ،  اب کسی اور کی جنگ نہیں لڑیں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کا واشنگٹن پوسٹ کو انٹرویو دیتے ہو ئے کہنا تھا کہ پاکستان امریکا کی بہت جنگ لڑ چکا ہے ،  اب کسی اور کی جنگ نہیں لڑیں گے، امریکا پاکستان کو بطور ہتھیار استعمال کرے ایسے تعلقات نہیں چاہیئں، امریکا اب پاکستان کے کندھے پر رکھ کر بندوق چلانا چھوڑ دے ،پاکستان میں طالبان کی محفوظ پناہ گاہیں نہیں ، امریکا کو شاید سمجھ نہیں آ رہی کہ پاکستان دوست ہے یا دشمن ,امریکا نے پاکستان کو خود سے دور کیا ہے، امریکا کے لیے پاکستان کرائے کی بندوق نہیں ہے۔ وزیر اعظم عمران خان  کا کہنا تھا کہ دونوں ملکوں میں اب برف پگھلی ہے, امریکی پالیسی سے اتفاق نہیں کرنےکا مطلب امریکا مخالف ہونا نہیں ہے،ہم وہ کریں گے جو ملک اور عوام کے لیے بہتر ہو گا، امریکی جنگ میں پاکستان نے بہت کچھ کھویا ہے,ان کا کہنا تھا کہ اسامہ بن لادن کا قتل صرف قتل نہیں بلکہ پاکستان پر عدم اعتماد کا اظہار تھا،امریکی اتحادی ہونےکےباوجوداسامہ کی ہلاکت میں پاکستان پراعتماد نہ کرناتضحیک آمیزتھا۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی حالیہ ٹوئٹ اور اس پر جواب سے متعلق پوچھے گئے سوال پر وزیراعظم نے کہا کہ ٹوئٹر پر ٹرمپ کو جواب دینے کا مقصد ریکارڈ درست کرنا تھا، جواب میں لکھا تھا کہ امریکی صدر کو تاریخی حقائق پتہ ہونا چاہیے،امریکی جنگ میں شامل ہونےپرپاکستان کے فوجی اور شہری بم حملوں کانشانہ بنے،طالبان نے واضح طورپرکہاکہ افغانستان کی تعمیرنومیں امریکی امداد کی ضرورت ہوگی،ہم افغانستان سے مناسب تعلقات چاہتے ہیں۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ چین سے ہمارےتعلقات صرف ایک سمت میں نہیں،پاکستان سےچین کےتجارتی تعلقات ہیں اور ایسےہی تعلقات ہم امریکا سے بھی چاہتے ہیں۔