فضل الرحمان سےپوچھاجائے استعفیٰ کہاں ہے؟

فضل الرحمان سےپوچھاجائے استعفیٰ کہاں ہے؟


اسلام آباد(24 نیوز) تحریک انصاف کے رہنماؤں کی اپوزیشن پر چڑھائی،کوئی خوب گرجا برسا کسی نے لفظی وار کرڈالے۔

وزیر ریلوے شیخ رشیدنے اپوزیشن کو نشانے پر رکھ لیا، ان کا کہنا ہے کہ مولانافضل الرحمان نے کہا تھااستعفیٰ لیےبغیرنہیں جاؤں گا، فضل الرحمان سےپوچھاجائے استعفیٰ کہاں ہے؟ اب مولاناکہتےہیں دسمبرمیں بہت کچھ ہوگا، انہوں نےیہ نہیں بتایاکہ کس سال کا دسمبر ہوگا، آرمی چیف سےمتعلق قانون سازی ڈیڑھ ماہ میں ہوجائے گی۔

تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین نے بھی مخالفین پر لفظی وار کردیئے،ان کا کہنا ہے کہ لوٹ مار کرنے والے لندن چلے جائیں یا امریکا، عمران خان انہیں نہیں چھوڑینگے،بڑی محنت سے گرتی معیشت پر قابو پالیا،جیسے ڈالر اور معیشت پر قابو پایا ہے ویسے ہی مہنگائی پر بھی قابو پالیں گے۔

ادھر فواد چودھری کا کہنا ہے کہ اپوزیشن کو عمران خان کےساتھ ہی گزاراکرنا پڑے گا، مائنس ون کی باتیں کرتے سب ہی مائنس ہوتے جا رہے ہیں۔نواز شریف، شہباز شریف کےبعد اب تو سنا ہےمریم نواز بھی مائنس ہونے جا رہی ہیں۔

فواد چودھری کا مزید کہناتھا کہ اپوزیشن کو اپنے لیڈر کی تلاش ہے سیاست پاکستان میں کرنی ہے اور میٹنگز لندن کرنی ہے، اب کی بار شہباز شریف گئے ہیں تو پندرہ بیس سال بعد ہی واپس آئیں گے۔

Malik Sultan Awan

Content Writer