پی ٹی آئی پارٹی فنڈنگ کیس،تمام دستاویزات اکبر ایس خواجہ کو فراہم کرنے کی ہدایت

پی ٹی آئی پارٹی فنڈنگ کیس،تمام دستاویزات اکبر ایس خواجہ کو فراہم کرنے کی ہدایت


اسلام آباد(24نیوز)الیکشن کمیشن نے پارٹی فنڈنگ میں مبینہ بے ضابطگیوں کے معاملے پر پی ٹی آئی کو تمام دستاویزات درخواست گزار اکبر ایس بابر کو فراہم کرنے کی ہدایت کر دی۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی پارٹی فنڈنگ میں مبینہ بے ضابطگیوں کے معاملے پر ممبر سندھ غفار سومرو کی صدارت میں 4 رکنی بنچ نے سماعت کی۔اکبر ایس بابر کے وکیل الیکشن کمیشن میں پیش تاہم تحریک انصاف کے وکیل انور منصور الیکشن کمیشن میں پیش نہ ہوئے۔تحریک انصاف کے فنانس سیکرٹری سردار اظہر پیش ہوئے اور الیکشن کمیشن کو بتایا کہ انور منصور سپریم کورٹ میں مصروف ہیں۔ اکبر ایس بابر کے وکیل نے بتایا کہ تحریک انصاف ملک سے باہر پیسے اکٹھے کرتی ہے۔ ملک سے باہر سے فنڈنگ لینا قانون کی خلاف ورزی ہے۔ وکیل اکبر ایس بابر نے کہا کہ امریکہ اور ڈنمارک سے رقم لینے کے شواہد بھی پیش کیے ہیں۔

تحریک انصاف کی جانب سے کیس ملتوی کرنے کی استدعا کی گئی۔ ممبر الیکشن کمیشن نے کہا کہ یہ کیس 2014 سے زیر التوا ہے۔ ممبر الیکشن کمیشن کے پی کے ارشاد قیصر نے کہا کہ سپریم کورٹ میں کیس کا فیصلہ چند ماہ میں ہو جاتا ہے۔ الیکشن کمیشن پر دھبہ لگ سکتا ہے۔ درخواستگزار ا نے پی ٹی آئی کی جانب سے جمع کرائی گئی اکاونٹس کی تفصیلات فراہم کرنے کی استدعا کر دی۔ بعد ازاں اکبر ایس بابر نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ عمران خان میرٹ پر فیصلوں کے دعویدار تھے،لیکن یہ افسوسناک پہلو ہے کہ پی ٹی آئی سرمایہ داروں کی پارٹی بن کر رہ گئی ہے، عمران خان نے ٹکٹ ارب پتیوں کو دے کر ورکرز کے منہ پر تھپڑ مارا ہے۔

الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کو تمام دستاویزات اکبر ایس بابر کو فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کیس کی سماعت 20 ملتوی کر دی۔