تیرہ اپریل 2017 کو قتل کیا گیا مشعال کا کیس زیر سماعت

تیرہ اپریل 2017 کو قتل کیا گیا مشعال کا کیس زیر سماعت


پشاور(24نیوز) عبدالولی خان یونیوسٹی کے طالبعلم مشعال کو تیرہ اپریل 2017کو قتل کیا گیا۔ پشاور ہائیکورٹ نے ستائیس جولائی کو نوٹس لیا۔ اور کیس کو مردان میں انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں ریفر کیا۔

 تفصیلات کے مطابق تیرہ اپریل 2017 کو عبدالولی خان یونیوسٹی کے طالبعلم مشال کو قتل کیا گیا۔ پشاور ہائیکورٹ نے ستائیس جولائی 2017 ء کو نوٹس لیا اور کیس کو مردان میں انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں ریفر کیا گیا۔

کیس کو سکیورٹی وجوہات کی بنا پر مدعی مقدمہ اقبال خان کی درخواست پر مردان سے ایبٹ آباد منتقل کیا گیا اور سماعت ہری پور سینٹرل جیل میں شروع کی گئی۔ کیس کی پہلی پیشی ایبٹ آباد اٹھائیس اگست 2017 کو ہوئی۔ گواہان میں ملازمین اور ایڈمنسٹریشن بلاک سمیت پولیس اہلکار اور ڈاکٹرز بھی پیش ہوئے۔

کیس میں 78 گواہوں کی فہرست پیش کی گئی جس میں 51 پیش ہوئے۔ ٹرائل میں 57 ملزموں کے وکلا پیش ہوئے۔ مدعی کی جانب سے پراسیکیوٹر عبدالحمید خان آر ایف بلال فضل نورانی چارسدہ اقبال خان کے مقرر کردہ وکلا میں شعا ب خٹک ایاز خان بیرسٹر عامر چمکنی سردار عبدالروف حافظ کالا خان شامل تھے۔

کیس کیلئے پندرہ لاکھ روپے حکومت نے فنڈ دیا ۔ کے پی حکومت نے سردارعبدالرؤف ایڈوکیٹ کو بطوراسپیشل پراسیکیوڑ وکیل نامزد کیا ۔