مشال قتل کیس، ایک ملزم کو سزائے موت، 5 کو 25،25 سال قید کی سزا


ہری پور(24نیوز) مشال قتل کیس کا انسداد دہشتگردی عدالت کے جج فضل سبحان نے فیصلہ سنا دیا۔ ایک ملزم کو سزائے موت ، پانچ مجرموں کو 25 ،25 سال  اور 25  مجرموں کو 4،4 سال قید کی سنا دی گئی جبکہ  26 کو بری کردیا گیا ۔

تفصیلات کے مطابق مشال قتل کیس میں گرفتار 58 ملزموں کوسنٹرل جیل ہری پور میں انسداد دہشتگردی عدالت کے جج فضل سبحان کے سامنے پیش کیا گیا۔ اے ٹی سی کے جج فضل سبحان نے ایک ملزم کو سزائے موت اور پانچ کو 25-25 سال قیدکی سزا سنائی۔ اس موقع پر ہری پور کی سینٹرل جیل میں سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے اورجیل کے اطراف سیکیورٹی کےلئے پاک فوج کے دستے تعینات تھے۔

عدالت پانچ پانچ ملزموں کو بلا کر سزا سنا رہی ہے۔ کل 58 ملزموں میں سے 26 کو شک کا فائدہ دے کر رہا کردیا گیا۔

واضح رہے کہ عبدالولی خان یونیورسٹی میں گذشتہ برس 13 اپریل کو جرنلزم کے 23 سالہ طالب علم مشال خان کو مشتعل ہجوم نے توہین مذہب کا الزام لگا کر قتل کر دیا تھا۔ کیس میں 61 نامزد ملزمان میں سے 58 گرفتار ہیں، جن میں فائرنگ کا اعتراف کرنے والا ملزم عمران بھی شامل ہے۔ فرار ہونے والے ملزموں میں پی ٹی آئی کا تحصیل کونسلر عارف، طلبا تنظیم کا رہنما صابرمایار اور یونیورسٹی کا ایک ملازم اسد ضیا شامل ہیں۔