ایم کیوایم پاکستان دو دھڑوں میں تقسیم ، فاروق ستار،عامر خان میں ڈیڈ لاک برقرار


کراچی(24نیوز) ایم کیوایم پاکستان تا حال دو دھڑوں میں تقسیم ، فاروق ستار اور عامر خان گروپ میں ڈیڈ لاک برقرار،فاروق ستار تو بہادر آباد والوں کو بھائی قرار دے رہے ہیں، تاہم کامران ٹیسوری نے وسیم اختر ، کنور نوید، اور دیگر کا بد عنوانیوں پر مبنی کچا چٹھا کھولنے کا اعلان کررکھا ہے، شہر میں مسلح تصادم کا بھی خدشہ ہے وزیرِ اعلیٰ سندھ نے سیکورٹی اداروں کو چوکنا رہنے کی ہدایت کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مذاکرات میں ناکامی ہوئی بہادرآباد کی رابطہ کمیٹی نے رات گئے اجلاس منعقد کیا اور فیصلہ کیا  کہ کامران ٹیسوری کو ہر گز سینیٹ کے انتخابات کے لئے منتخب نہیں کیا جائے گا۔ اس اعلان کے بعد کامران ٹیسوری نے پریس کانفرنس کے زریعے اہم انکشافات کا اعلان کردیا۔ کامران ٹیسوری نے دعویٰ کیا ہے کہ عامر خان،وسیم اختر , فیصل سبزواری , کنور نوید جمیل اور دیگر کی کرپشن کی کہانی سے پردہ اٹھائیں گے۔ جس کے بعد دونوں دھڑوں میں مزید اختلافات کی آگ بھڑکنے کا اندیشہ ہے۔

ذرائع کے مطابق متحدہ پاکستان کے دونوں گروہوں کے کارکنان میں علاقائی سطع پر مسلح تصادم کا خطرہے۔ لاندھی ،کورنگی اور لیاقت آباد سمیت دیگر علاقہ عامر خان کے کنٹرول میں ہیں جبکہ فاروق ستار کے کارکنان کا زور سینڑل ،فیڈرل بی ایریا ناظم اباد اور نیو کراچی چلتا ہے۔عامر خان کے ساتھ آنے والے زیادہ تر کارکنان کا پہلے مہاجر قومی موومنٹ سے تعلق رہا ہے جبکہ قاروق ستار کے ساتھ متحدہ لندن کے بھی کئی کارکنان ہیں۔

دوسری جانب جیل سے رہا ہونے والے کارکنان پر نظر رکھنے کے لئے متعلقہ تھانوں کو احکامات جاری کر دیئے گئے ہیں۔ اس حوالے سے حساس اداروں نے سندھ حکومت کو آگاہ کردیا ہے۔وزیر اعلی سندھ نے پولیس رینجرز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو الرٹ رہنے اور سیکیورٹی سخت رکھنے کی ہدایت کردی ہے۔