ہارس ٹریڈنگ کے الزامات لگانے والے خود وضاحت کریں:وزیر اعلیٰ سندھ

ہارس ٹریڈنگ کے الزامات لگانے والے خود وضاحت کریں:وزیر اعلیٰ سندھ


کراچی(24نیوز) پیپلزپارٹی نے سندھ سے سینٹ انتخابات کے لئے بیس کاغذات نامزدگی جمع کرادیئے،امیدواروں میں رضا ربانی، مولا بخش چانڈیو سمیت دیگر امیدوار شامل،وزیر اعلیٰ سندھ کہتے ہیں ہارس ٹریڈنگ کے الزامات لگانے والے خود وضاحت کریں۔

تفصیلات کے مطابق  پیپلزپارٹی کے امیدوار وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی قیادت میں الیکشن کمیشن کراچی پہنچے تو انکا جیالوں نے پرتپاک استقبال کیا کارکنان نے جیئے بھٹو کے فلک شگاف نعرے لگائے۔ وزیرِ اعلیٰ سندھ نے اپوزیشن جماعتوں کے سینیٹ انتخابات میں ہارس ٹریڈنگ کے الزامات کو رد کردیا اور کہا کہ خرم شیر زمان سے پوچھیں انہیں کس نے پیسوں کی آفر کی۔ اس موقع پر رضا ربانی نے کہا کہ کوشش ہوگی کہ سینیٹ کو مضبوط سے مضبوط بنایا جائے۔

واضح رہے کہ پیپلزپارٹی کی جانب سے سندھ سے سات جنرل نشستوں پر رضا ربانی، مولا بخش چانڈیو،مرتضی وہاب، ایاز مہر، مصطفے نواز کھوکھر، محمد علی شاہ جاموٹ، امام الدین شوقین نے کاغزات نامزدگی جمع کرائے جبکہ ٹیکنو کریٹس کی نشست پر ڈاکٹر سکندر میندھرو اور رخسانہ زبیری اور خواتین کی 2 نشستوں کے لئے کرشنا کولہی اور قرت العین مری نے کاغزاتِ نامزدگی جمع کرائے۔اقلیتی نشست پر پیپلزپارٹی کے دیرینہ کارکن انوار لال دین نے کاغزات نامزدگی جمع کرائے۔ پیپلزپارٹی نے 12 امیدواروں کے ساتھ 12 ہی کورنگ امیدواروں کے کاغزات نامزدگی جمع کرائے جن میں تاج حیدر، نوید انتھونی، ندا کھوڑو، جاوید نایاب لغاری، قاسم سومرو، حمیرا علوانی شامل ہیں۔