عدالتی فیصلہ سےمیرے مؤقف کی تائید ہو گئی: والد مشال خان

عدالتی فیصلہ سےمیرے مؤقف کی تائید ہو گئی: والد مشال خان


 برمنگھم (24 نیوز) مشال خان کے والد اقبال لالا نےعدالتی فیصلہ کے بعد پہلا انٹرویو سٹی نیوز نیٹ ورک کو دیتے ہوئے کہا ہے کہ عدالتی فیصلہ سے ان کے مؤقف کی تائید ہو گئی۔

وہ برمنگھم میں سٹی نیوز نیٹ ورک کے نمائندہ سے گفتگو کر رہے تھے۔

ضرور پڑھئے:نقیب قتل کیس میں اہم موڑ، اقبال جرم کرنیوالے 4ملزمان مکر گئے

ان کا کہنا تھا کہ جن کو چھوڑاگیا، انہیں بھی سزا ملنی چاہیے تھی۔ عدالتی فیصلے سے میرے مؤقف کی تائید ہوئی۔

قبل ازیں مشال کے بھائی نے تمام ملزموں کو سزا کا مطالبہ کیا۔ میڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ فیصلہ پر وکلا مشاورت کریں گے۔ پولیس رابطہ میں ہے۔ سیکورٹی بھی حاصل ہے۔

یہ بھی پڑھئے:بدنام زمانہ سابق انسپکٹرعابد باکسر دبئی سےگرفتار

خیال رہے کہ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے مشال قتل کیس کا فیصلہ سنا دیا ہے۔ عدالت نے عمران نامی مجرم کو سزائے موت کا حکم سنایا۔ عدالت نے 5مجرموں کو 25،25سال اور25مجرموں کو 4،4سال قید کی سزا سنائی۔ مقدمہ میں نامزد 26ملزموں کو بری کر دیا گیا۔

مرکزی ملزم کو ایک لاکھ روپے جرمانہ جبکہ عدالت نے مفرور ملزموں کو اشتہاری قرار دے دیا۔ خیبرپختونخوا حکومت نے بری کیے گئے ملزموں کے خلاف اپیل دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید دیکھیں: