بیمار سابق وزیر اعظم جیل منتقل



لاہور( 24نیوز )سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کو سروسز ہسپتال سے کوٹ لکھپت جیل منتقل کیا جارہا ہے،پولیس گاڑیاں ان کو ہسپتال سے لے کر جیل کی جانب روانہ ہوچکی ہیں۔

تین بار وزیر اعظم رہنے والے شخص کی صحت کے ساتھ کھلواڑ کیا جارہا ہے:مریم نواز

سابق وزیر اعظم کی صاحبزادی مریم نواز نے کہا ہے کہ میاں نواز شریف کو ایسے ہسپتال لایا گیا جہاں دل کا علاج ہی نہیں ہوتا،میاں صاحب کہتے رہے حکومت کا رویہ غیر سنجیدہ ہے،پانچ دن تک ان کو سروسز ہسپتال کیوں رکھا گیا?ہر بورڈ کہتا رہا دل کا عارضہ ہے لیکن علاج نہ کیا گیا۔اس شخص کی صحت کے ساتھ کھلواڑ کیا گیا جو تین بار وزیر اعظم رہا۔

کوٹ لکھپت جیل منتقل کرنے کا فیصلہ

سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کو سروسز ہسپتال سے کوٹ لکھپت جیل منتقل کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے،سابق وزیر اعظم کے پنجاب کارڈیالوجی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں جانے سے انکار کے باعث فیصلہ کیا گیا۔

ایڈیشنل چیف سیکریٹری ہوم فضیل اصغر کا کہنا ہے ڈاکٹروں کو اعتراض نہ ہوا تو آج جیل منتقل کر دیں گے ۔پولیس نے مخدوم جاوید ہاشمی کو میاں نواز شریف سے ملنے سے روک دیا۔

ادھر میاں نواز شریف سے سروسز ہسپتال میں والدہ بیگم شمیم ،بیٹی مریم نواز اور نواسی ماہ نور صفدر نے ملاقات کی ہے، ملاقات کے دوران سب نے ان کی خیریت دریافت کی،والدہ نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ نواز شریف اور شہباز شریف کی مشکلیں آسان کرے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer