سعودی عرب: غیرملکی مزید 5 شعبوں میں کام نہیں کرسکیں گے

سعودی عرب: غیرملکی مزید 5 شعبوں میں کام نہیں کرسکیں گے


 ریاض(24نیوز) سعودی عرب میں مزید 5 شعبوں میں غیر ملکی تارکین وطن کام نہیں کرسکیں گے،وزارت محنت و سماجی امور کے مطابق ان شعبوں کی مکمل سعودائزیشن کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق  سعودی حکومت نے غیرملکیوں پر ایک اور پابندی عائد کردی، جس کے تحت مزید 5شعبوں میں وہ کام نہیں کرسکیں گے، اس سلسلے میں وزارت محنت و سماجی امور  کاکہنا تھا کہ ان شعبوں کی مکمل سعودائزیشن کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، ان میں شعبوں میں شامل  طبی آلات، تعمیراتی سامان، گاڑیوں کے پرزہ جات، قالین اور مٹھائیوں کی دکانیں شامل ہیں، جہاں غیر ملکی اب کام نہیں کرسکیں گے۔

 دریں اثناءوزارت محنت کے ذرائع نے خبر دار کیا ہے کہ مملکت میں سعودائزیشن کے قانون پر سختی سے عمل درآمد کرایا جائے گا اس ضمن میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی، وزارت کی جانب سے ملکی سطح پر تفتیشی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جو مارکیٹوں کا جائزہ لیکر سعودائزیشن کے عمل کو تیز اور شفاف بنانے کےلئے کوشاں ہیں.

ذرائع کا کہنا تھا کہ ہمارا ہدف ہے کہ زیادہ سے زیادہ سعودی نوجوانوں کو روزگار مہیا کیا جائے تاکہ ملک میں بے روزگاری کو ختم کیا جاسکے اس ضمن میں وزار ت محنت کی جانب سے جامع پروگرام بھی مرتب کیا گیا ہے جس کے تحت سعودی نوجوانوں کو مختلف شعبوں میں عملی تربیت فراہم کی جاتی ہے تاکہ وہ مقامی مارکیٹ کے تقاضوں کے مطابق کام کرسکیں.