فلمی انداز میں ملک سے فرار ہونیوالا شخص جاپان کیلئے ’’موسٹ وانٹڈ‘‘بن گیا

فلمی انداز میں ملک سے فرار ہونیوالا شخص جاپان کیلئے ’’موسٹ وانٹڈ‘‘بن گیا


ٹوکیو(24 نیوز) جاپان نے فلمی انداز میں فرار ہوکر لبنان پہنچنے والے شخص کو لبنان سے مانگ لیا، کارلوس غصن پر بطور سی ای او نسان کمپنی بدعنوانی کا الزام ہے،تاہم لبنان کا کہنا ہے کہ وہ اپنا شہری کسی دوسرے ملک کے حوالے نہیں کرے گا۔

گاڑیاں بنانے والی کمپنی نسان کا سربراہ جاپان اور لبنان حکومت کے درمیان تناؤ کی وجہ بن گیا، جاپان کارلوس غصن کی حوالگی کا مطالبہ کررہا ہے جبکہ لبنان کا کہنا ہے کہ ان کے ہاں اپنے شہری کسی دوسرے ملک کے حوالے کرنے کا قانون ہی نہیں

کارلوس غصن پر بدعنوانی کے الزام ہیں، وہ گرفتار ہوئے اور ضمانت ہوگئی،ضمانت بھی ایسی کہ انہیں اپنی اہلیہ سے بھی ملنے کی اجازت نہیں تھی،لیکن کارلوس نے فلمی انداز میں جاپان سے راہ فرار اختیار کرلی۔

کارلوس غصن 29دسمبر کو اپنے گھر سے نکلے،بلٹ ٹرین پر اوساکا پہنچے،جہاں ان کے ساتھیوں نے انہیں ہوٹل میں قیام کے دوران ایک بکس میں بند کیا اور ترکی جانے والی پرواز پر چڑھا دیا، جہاں موجود ان کے ساتھیوں نے انہیں بکس سے نکالا اور وہ استنبول سے لبنان پہنچ گئے، جہاں ان کی اہلیہ پہلے ہی ان کی منتظر تھیں۔

امریکی اخبار وال سٹریٹ جرنل کے مطابق کارلوس غصن کو موسیقی کے آلات والے بکس میں چھپایا گیا تھا،جس کے نیچے ہوا کیلئے چھید کردیئے گئے تھے،،، تاکہ کارلوس کو سانس لینے میں دشواری پیش نہ آسکے، آلات موسیقی کی ہی وجہ سے ایئرپورٹ کے عملے نے اس بکس کو چیک تک نہیں کیا۔

جاپان سے نکلنے کے بعد کارلوس نے صرف ایک بیان جاری کیا جس میں بدعنوانی کے الزامات کی تردید کے ساتھ جاپان کے نظام عدل پربداعتمادی کا اظہار کیا گیا۔ امید ظاہر کی جارہی ہے کہ کارلوس کل پریس کانفرنس کریں گے۔

Azhar Thiraj

Senior Content Writer