دوسری شادی اور اس کے بنیادی جواز

دوسری شادی اور اس کے بنیادی جواز


’’میرے والد 60 سال کے ہیں وہ  47 سالہ میری والدہ کے ساتھ نہیں رہتے ہوئے بھی نہیں ہیں‘‘

میری والدہ جانتی ہیں کہ ان کے شوہر نے ’کسی اور عورت سے خفیہ شادی کر رکھی ہے‘ لیکن وہ اس کے باوجود اس چیز کو سنبھالے ہوئے ہیں۔ اگر اس صورتحال کا علم لوگوں کو ہو گیا تو وہ اس کا سامنا نہیں کر پائیں گی۔

بی بی سی   کی ایک رپورٹ میں ایک بیٹی جن کا تعلق اربیل (کردستان،عراق) سے ہے کے بارے میں یہ بات کرکے شادی جیسے پاکیزہ رشتے میں دراڑ کی سمت کی طرف نشاندہی کئی گئی ہے لیکن نفسیات کا طالب ہونے کی حیثت میں مجھے جس چیز نے زیادہ چونکا دیا وہ ہمارےمسلم معاشرے اور وہ بھی خاص طور پر عرب معاشرے میں خاندانی نظام پر ضرب لگانے کے لیے کام تیز ہو رہا ہے۔

دوسری شادی کو اتنا تنقید کے نشتر پر رکھ کر مشکل بنایا جارہا ہے جس سے بے راہ روی،زنا اور گناہ کی اندھی وادی میں گر جاتے ہیں اور یہ ہمارے معاشرے  میں  آئے روز بڑھ رہا ہے۔

ایک کہانی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ایک جہت(رخ)

فائزہ اپنے والدین کی چہیتی بیٹی تھی اور اپنے خاندان میں نہایت سگھڑ اور سلیقہ مند کی شہرت رکھتی تھی ۔ امجد کے ساتھ شادی کے بعد شروع میں تو ٹھیک رہا لیکن ایک سال کا عرصہ بھی نہیں گزرا تھا کہ امجد کا رویہ عجیب سا ہوگیا پہلے امجد فائزہ کے سارے  دن کے واقعات بہت دل چسپی سے سنتا اور اس کی فیلنگ (محسوسات ) کو اپنی فیلنگ سمجھتا تھا لیکن اب یوں لگتا کہ اس کو فائزہ کی فیلنگ کی کوئی پروا نہیں بلکہ اس کے دکھ بھی اب اس کو دکھ نہیں لگتے تھے ۔۔۔ایسے میں فائز ہ کی ایک سہیلی نے اسے مشورہ دیا جس نے شک کے بیج کو مزید توانائی دی کہ ہونا ہو امجد بھائی کا کہیں اور چکر ہے کیونکہ جہاں وہ کام کرتے ہیں وہاں بھی خواتین موجود ہیں ۔۔۔۔شک کو ایک اور دلیل مل گئی اور یوں ان کی زندگی میں دوریاں بڑھنے لگیں۔

امجد خود جس بے چینی اور زندگی کے دوراہے پر کھڑا تھا اسے خود انداز ہ نہیں ہورہا تھا کہ وہ اس صورت حال سے کیسے نکلے ،وہ جس فرم میں کام کر رہا تھا اس میں ڈائون سائزنگ (لوگوں کی نوکریوں سے جبری رخصت ) ہورہی تھی اور اس پر کام کے دبائو کے ساتھ ساتھ اس کے HODکے ساتھ ان بن کی وجہ سے حالات مزید خراب ہوگئے تھے اس وجہ سے اس کی صحت(پیٹ خراب،تیزابیت ،بھوک میں کمی، نیند کا نہ  آنا ،تھکاوٹ ،بے چینی ،پریشانی اور گھبراہٹ ) بھی خراب رہنے لگی ، اب اپنے پیارے  جن میں اس کی بیگم فائزہ بھی شامل تھی امجد کا ان سب کے ساتھ بات چیت کرنے کو دل نہیں کررہا تھا ، وہ عجیب مخمصے میں تھا جو اس کے کولیگ (دفتر کے دوسرے ساتھی ) امجد کے معاملے کو جان رہے تھے وہ بھی اسے یہ مشورہ دے رہے تھے کہ جاب کو بچائو باقی چیزیں خود ٹھیک ہوجائیں گی۔امجد عجیب دوراہے پرکھڑا تھا اور اس کو کسی بات کی سمجھ نہیں آرہی تھی وہ کیا کرے ایسے میں حالات مزید خراب ہو جارہے تھے۔

میاں بیوی میں دوری کیوں ہوتی ہے؟

اگر آپ کے درمیان میں دوریاں اور رنجشیں بڑھ رہی ہیں اور دونوں فریق سمجھتے ہیں کہ اس میں ان کا قصور نہیں۔

تو یاد رکھیے اپنے آپ کو بچائیے اور کسی چارہ گر (ماہرنفسیات) کی ضرورت ہے۔

ایسا کیوں ہوتا آئیے دیکھتے ہیں:

یاد رکھیے گا کہ دوسری شادی غلط نہیں لیکن اگر یہ آپ دونوں میں سے کسی ایک کے غلط رویے کی وجہ سے ہوتی ہے تو پھر سوچنے کی ضرورت ضرورہے۔

اک چارہ گر(نفسیات دان) ، تربیت کار(ٹریننر)