ادویات کی قیمتوں میں کمی کا نوٹیفیکیشن دوبارہ جاری

ادویات کی قیمتوں میں کمی کا نوٹیفیکیشن دوبارہ جاری


اسلام آباد(صبا بجیر) وزرات صحت اور ڈریپ نے قوم کو ایک بار پھر ماموں بنا دیا، پرانے نوٹیفیکیشن پر تاریخ بدل کر دوبارہ کمی کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیاگیا۔ 

 وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت نے وفاقی کابینہ سمیت پوری قوم کو ماموں بنا دیا، 19 جون 2019 کو جاری کردہ 89 ادویات کی قیمتوں میں 15 فیصد کمی کا نوٹیفکیشن دوبارہ جاری کر دیا،اسی ایس آراو کو بنیاد بنا کر قوم کو خوش خبری سنائی گئی، وفاقی کابینہ کو گزشتہ اجلاس میں وزیر صحت نے بتایا کہ 89 ادویات کی قیمتوں میں 15 فیصد کمی کر دی ہے۔

سابق وفاقی وزیرصحت عامر کیانی کو ان ادویات کی قیمتوں میں 15 فیصد سے تین سو فیصد تک اضافہ کے باعث وزارت سے الگ کیا گیا تھا، وزیراعظم نے ہدایت کی تھی کہ قیمتوں میں اضافے کو واپس لیا جائے، ڈاکٹر ظفر مرزا کو ذمہ داری سونپی گئی تو انہوں نے قوم کو ادویات کی قیمتوں کا تحفہ دیتے ہوئے ادویات کی قیمتوں میں 15 فیصد سے تین سو فیصد تک اضافہ کا نوٹیفکیشن واپس لینے کی بجائے نیا نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔

چیف آپریٹنگ آفیسر ڈریپ نے تصدیق کی کہ یہ وہی ایس آر او ہے جو کہ 19 جون کو جاری ہوا تھا، ڈاکٹر ظفر مرزا نے تین ماہ قبل عوام سے ادویات کی قیمتوں کی مد میں حاصل کئے گئے کروڑوں روپے واپس دلوانے کا اعلان کیا، تاہم اس اعلان پر عملدرآمد نہ کیا جا سکا۔