نواز شریف ،مریم نواز کیخلاف برطانیہ میں بھی گھیرا تنگ

نواز شریف ،مریم نواز کیخلاف برطانیہ میں بھی گھیرا تنگ


لندن( 24نیوز ) احتساب عدالت کے بعد بھی نواز شریف خاندان کی مشکلات کم نہیں بلکہ مزید اضافہ ہوگیا ہے،برطانیہ میں بھی گھیرا تنگ ہوتا جارہا ہے،بدعنوانی کے خلاف جدوجہد کرنے والی بین الاقوامی تنظیم ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے برطانوی حکومت سے سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف تحقیقات کا مطالبہ کردیا۔

واضح رہے سابق وزیراعظم نواز شریف ان کے بچوں مریم نواز،حسن اور حسین نواز اور داماد کیپٹن (ر)محمد صفدر کیخلاف ایون فیلڈ ریفرنس کیس کا فیصلہ سنادیا گیا ہے،نوازشریف نے فیصلہ موخر کرنے کی اپیل کی تھی لیکن احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے یہ درخواست مسترد کرتے ہوئے نو از شریف کی قسمت کا فیصلہ سنادیا ہے،یہ فیصلہ ساڑھے نو ماہ بعد 109سماعتوں کے بعد سنایا گیا ہے،نواز شریف کو دس سال،مریم نواز7سال ،کیپٹن (ر)محمد صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنادی گئی ہے،نواز شریف کو اسی لاکھ پاﺅنڈ جرمانہ ،جائیداد ضبط کرلی گئی،مریم نواز کو 32کروڑ 40لاکھ روپے جرمانہ بھی ہوا،مریم نواز الیکشن بھی نہیں لڑ سکیں گی۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:  ایون فیلڈ ریفرنس:نواز شریف کو10،مریم نواز کو 7سال قید

اس فیصلے کے بعد ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے مطالبہ کیا کہ لندن میں موجود نواز شریف کی 4 جائیدادوں کی تحقیقات کی جائیں،ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ نواز شریف اور ان کے خاندان کو لندن میں محفوظ پناہ گاہ فراہم نہ کی جائے،تنظیم کا مزید کہنا تھا کہ اگر ثابت ہوگیا کہ لندن میں جائیدادیں کرپشن کے پیسے سے خریدی گئی ہیں، تو ضبطگی کی کارروائی کی جانی چاہیے۔