’بھارتیو کشمیر سے نکل جاؤ‘کشمیری پروفیسرنعرہ حق بلند کرتے ہوئےشہید ہو گیا

’بھارتیو کشمیر سے نکل جاؤ‘کشمیری پروفیسرنعرہ حق بلند کرتے ہوئےشہید ہو گیا


سری نگر (24 نیوز) بھارتی فوج کاہرظلم کشمیریوں کے دل میں آزادی کی تڑپ بڑھارہاہے۔آزادی کے جذبے نےاستادکوبھی قلم چھوڑکربندوق اٹھانے پرمجبورکردیا۔کشمیریونیورسٹی کے ڈاکٹررفیع بٹ نے بھی حق خودارادیت کے لیے بھارتی درندوں سےلڑتے ہوئےاپنی جان قربان کردی۔

24 نیوز کے مطابق 5مئی کورفیع بٹ نے کشمیریونیورسٹی میں آخری لیکچردیا۔پھرچند ہی گھنٹوں بعد خبرآئی کہ مجاہدپروفیسرنے ضلع شوپیاں میں بھارتی درندوں سے لڑتے ہوئے جان دے دی۔

یہ بھی پڑھیں: آزاد کشمیر، برطانیہ لے جانےکا جھانسہ دے کر خواتین سے شادی کا اسکینڈل سامنے آ گیا 

بھارتی افواج کی درندگی اورانسانیت سوز مظالم نے ایک پروفیسرنےبھی بندوق اٹھالی۔بھارتی درندوں سے آزادی کی جنگ لڑتے ڈاکٹررفیع بٹ مقبوضہ کشمیرپرقربان ہوگیا۔

غیر معمولی صلاحیتیوں کا مالک ڈاکٹر محمد رفیع بٹ دانشوراورایک قابل پروفیسر تھا۔سوشیالوجی میں ماسٹراورپھرپی ایچ ڈی بھی کی۔ابھی سال پہلے ہی وہ کشمیر یونیورسٹی میں لیکچرار بنا تھالیکن بھارتیوں کےسفاکانہ مظالم نے اسےمجاہد پروفیسربناڈالا۔

پڑھنا نہ بھولیں:معصوم کشمیری لڑکیوں کے ساتھ جنسی زیادتی سازش کے تحت کی جارہی ہے، مشعل ملک 

ظلم وجبرسےکشمیریوں کودبایانہ جاسکا۔بھارت کی ریاستی دہشت گردی نےمقبول بٹ،برہانی وانی سمیت ہزاروں لاکھوں نوجوانوں کے دلوں میں آزادی کی شمع کوالاو میں بدل دیا۔آزادی کی خاطراپنالہودینے والوں میں اب کشمیر یونیورسٹی کےنوجوان پروفیسر،ڈاکٹررفیع بٹ نے بھی اپنانام لکھوالیاہے۔