پاکستانی لڑکیوں سے شادی اور جسم فروشی کا دھندہ، ایک اور گروہ گرفتار

پاکستانی لڑکیوں سے شادی اور جسم فروشی کا دھندہ، ایک اور گروہ گرفتار


راولپنڈی (24نیوز) ایف آئی اے انسداد انسانی اسمگلنگ سیل نے شادی کے بہانے لڑکیوں کے اسمگلنگ کیس میں ملوث تین چینی باشندوں سمیت 7 ملزمان کو گرفتارکرلیا ہے۔

ایف آئی اے کے انسداد انسانی اسمگلنگ سیل راولپنڈی نے شادی کے بہانے پاکستانی لڑکیوں کی اسمگلنگ میں ملوث چینی گروہ گرفتار کو گرفتار کرلیا ہے۔ پکڑے گئے گروہ میں 3 چینی باشندے، 4 پاکستانی شہری شامل ہیں۔ ایف آئی اے حکام کے مطابق دو پاکستانی خواتین نے چینی گروہ کیخلاف ڈی جی ایف آئی کو شکایت کی تھی۔

ڈی جی آیف آئی اے کی ہدایت پر ایف آئی اے انسداد ہیومن اسمگلنگ سیل نے کارروائی کرتے ہوئے پاکستانی لڑکیوں سے شادیاں کرنے والے چینی باشندے گیانگ دا اور فیوسنگ بو کو گرفتار کرلیا۔گیانگ دا نے صائمہ نامی لڑکی جبکہ فیوسنگ بو نےصبا جہانگیر سے شادی کر رکھی تھی۔

ملزمان تبدیلی مذہب کے جعلی سرٹیفکیٹ بنا کر پاکستانی لڑکیوں سے شادیاں کرتے تھے، چین لے جانے کے بعدپاکستانی لڑکیوں سےجسم فروشی کا دھندہ کرایا جاتا تھا۔ پاکستانی لڑکیوں کے اعضاء نکال کر بیچے جانے کی بھی شکایات تھیں،گرفتار ملزمان کے خلاف قانونی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے.

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔