حسین حقانی کی گرفتاری کیلئے ایف آئی اے نے انٹرپول کو خط لکھ دیا


اسلام آباد (24 نیوز) سابق سفیر حسین حقانی کی وطن واپسی کے لیے وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے انٹرپول ہیڈ کوارٹر لیون کو خط لکھ دیا ہے۔ حسین حقانی سے متعلق انٹر پول کو یہ دوسرا خط لکھا گیا ہے۔

24 نیوز کے مطابق خط میں حسین حقانی کے خلاف درج مقدمہ اور عدالتی وارنٹ گرفتاری بھی بھیجے گئے ہیں۔ ایف آئی اے ذرائع کے مطابق حسین حقانی کی وطن واپسی کے لیے ایف آئی اے انٹر پول ہیڈ کوارٹر لیون کو خط لکھ دیا گیا ہے۔ وفاقی تحقیقاتی ادارے آیف آئی آے کی جانب سے انٹر پول خو حسین حقانی سے متعلق یہ دوسرا خط لکھا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھئے: سفارتی اہلکار کی گاڑی کی ٹکرسے نوجوان کی ہلاکت، امریکی سفیر کی دفترخارجہ طلبی 

خط میں حسین حقانی کے خلاف درج مقدمہ اور عدالتی وارنٹ گرفتاری بھی بھیجے گئے ہیں۔ کیس کی بہتر انداز میں پیروی کے لیے فرانس میں لیگل فرم کی خدمات حاصل کرنے پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔

ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے بشیر میمن آج انٹرپول ھیڈکوارٹر کی سالانہ کانفرنس میں شرکت کے لیے روانہ ہو گئے۔ ڈی جی ایف آئی اے انٹرپول حکام سے معاملہ پر بھی بات چیت کریں گے۔

پڑھنا نہ بھولئے: احتساب سب کا، قوم کی ایک ایک پائی وصول کی جائے گی، چیف جسٹس 

واضح رہے کہ انٹرپول ریڈ نوٹس سے ممبر ممالک کو آگاہ کرتا ہے کہ مزکورہ شخص ملکی قوانین اور عدالتی حکام کی روشنی میں مطلوب ہے۔ ایف آئی اے انٹر پول کے ڈپٹی ڈائریکٹر نورالحق ندیم پے ہیں۔ انٹر پول ہیڈ کوارٹر فرانس میں ہیں۔ انٹر پول نے پہلی مرتبہ حسین حقانی کی حوالگی کو سیاسی کیس قرار دے کر مدد سے انکار کیا تھا۔

یہ بھی خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے حکومت کو ایک ماہ کے اندر حسین حقانی کی گرفتار ی کے لیے احکامات جاری کر رکھے ہیں۔جس کے تقریباً دس گزر بھی چکے ہیں۔